***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > تلاش کریں

Share |
سرخی : f 1484    بیٹی کے ساتھ چچازاد بھائی سے نکاح کا حکم
مقام : بودھن,
نام : عبد النبی
سوال:    

میں اپنی لڑکی کا نکاح اپنے حقیقی چچا کے لڑکے سے کرنا چاہتا ہوں ، کیا یہ رشتہ جائز ہے یا اس میں کوئی حرمت والی بات ہے ؟ جواب کا منتظر رہوں گا۔


............................................................................
جواب:    

اپنی لڑکی کا نکاح حقیقی چچازاد بھائی سے کرنا شرعًا درست ہے ، اللہ تعالی نے جو محرمات نکاح بیان فرمائے ہیں اُس میں یہ داخل نہیں ، محرمات نکاح کے بیان کے بعد ارشاد الہی ہے :واحل لکم ما وراء ذلکم ۔ ترجمہ : اور تمہارے لئے اس کے علاوہ (عورتیں) حلال کی گئی ہیں ۔ (سورۃ النساء : 24)

         نیز حضرت نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنی شہزادی حضرت فاطمۃ الزھراء رضی اللہ عنھا کا نکاح اپنے حقیقی چچازاد حضرت علی کرم اللہ وجھہ سے کروایا ہے ۔

واللہ اعلم بالصواب سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ ، ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن۔

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com