***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > تلاش کریں

Share |
سرخی : f 612    شوہر کے کہنے پر سسرال جانا
مقام : ممبئی ، انڈیا,
نام : عالیہ سلطانہ
سوال:    

میرے شوہر ہمیشہ مجھے ہفتہ واری تعطیل سسرال میں گزارنے پر مجبور کرتے ہیں اور میں سسرال والوں کے ساتھ رہنے کو مناسب نہیں سمجھتی، کیا شوہر کو اس بات کا حق حاصل ہے کہ وہ مجھے ان کے ساتھ رہنے پر مجبور کرے؟


............................................................................
جواب:    

قرآن کریم میں اللہ تعالی نے رشتہ داروں کے ساتھ حسن سلوک کرنے کا تاکیدی حکم فرمایا ہے، سورۃ النساء میں ارشاد ہے: وَ بِالْوَالِدَینِ اِحْسَانًا وَّبِذِی الْقُرْبٰی۔ ترجمہ: تم والدین اور رشتہ داروں کے ساتھ حسن سلوک کرو۔ (سورۃ النساء۔ 36 ) ونیزارشاد الہی ہے: وَاٰتِ ذَا الْقُرْبٰی حَقَّہ۔ ترجمہ: اور قرابتداروں کو ان کا حق ادا کرو۔ (سورۃ بنی اسرائیل۔ 26 ) بیوی پر جائز صورتوں میں شوہر کی اطاعت و فرمانبرداری لازم ہے، لہٰذا اگر شوہر‘ بیوی کو اپنے والدین یا کسی رشتہ دار کے پاس لے جانا چاہے تو بیوی کو چاہئے کہ اپنے خاوند کی اطاعت کرتے ہوئے ان کے ساتھ جائے‘ نیز بغیر کسی شرعی وجہ کے کسی سے قطع تعلق کرنا شرعاً جائز نہیں- واللہ اعلم بالصواب – سید ضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com