AR 483 : کامیاب کون؟

کامیاب کون؟

     ہر انسان کی دلی آرزو وقلبی تمنا یہی ہوتی ہے کہ کامیابی اس کا مقدر بن جائے ،دنیا میں باعزت وباوقار زندگی گزارے اور آخرت میں بامراد اور سرخرو ہوجائے،کامیابی وفلاح کے حصول کے لئے وہ تگ ودو کرتا ہے،صبح ومساء اپنی تمام تر توانائیاں اسی کے حصول کے لئے صرف کرتا ہے،لیکن حقیقی طور پر فلاح اس وقت محقق ہوگی ،کامیابی اس وقت مقدر بنے گی جبکہ قرآن کریم کے بیان کردہ اصول کے موافق عمل کیا جائے۔

کامیابی وکامرانی ،فلاح ونجاح کے حصول کے اصول بیان کرتے ہوئے اللہ نے ارشاد فرمایا:

فَالَّذِينَ آَمَنُوا بِهِ وَعَزَّرُوهُ وَنَصَرُوهُ وَاتَّبَعُوا النُّورَ الَّذِي أُنْزِلَ مَعَهُ أُولَئِكَ هُمُ الْمُفْلِحُونَ .

ترجمہ:پس وہ لوگ جو اس(نبی کریم صلی اللہ علیہ والہ وسلم ) پر ایمان لائیں،اور ان کی تعظیم کریں،اور ان کی نصرت ودفاع کریں اور اس نور کی اتباع کریں جو ان کے ساتھ نازل کیا گيا ہے تو یہی لوگ فلاح پانے والے ہیں-(سورۃ الاعراف:157)۔

فلاح وکامیابی کے حصول کی شرائط میں "ایمان"شرط اول ہے،"حضور اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی تعظیم وتوقیر"شرط دوم ہے،"آپ کا دفاع اور آپ کے دین کی نصرت "شرط سوم ہے اور "آپ کی اتباع وپیروی " کوشرط چہارم قرار دیا گياہے۔

کامیابی وفلاح کی ان شرا‏ئط پر عمل آوری کے لئے حضرات صحابۂ کرام رضي اللہ تعالی عنہم کی بابرکت زندگی،ان کا ایمان راسخ،پاکیزہ کردار،اور ان کی 'ذات رسالت مآب صلی اللہ علیہ والہ وسلم سے بے انتہاء محبت ،والہانہ عقیدت ،آپ کی پیروی وفرمانبرداری،اطاعت واتباع بہترین نمونہ اور امت کے لئے مشعل راہ ہے۔

سورۂ بقرہ کی آیت نمبر "137"میں اللہ تعالی نے صحابۂ کرام کے ایمان کو امت کے لئے معیار اور کسوٹی قرار دیا ہے،ارشاد الہی ہے:

فَإِنْ آَمَنُوا بِمِثْلِ مَا آَمَنْتُمْ بِهِ فَقَدِ اهْتَدَوْا .

ترجمہ:اگر وہ لوگ بھی اس طرح ایمان لائیں جیساکہ (ائے صحابہ)تم ایمان لائے ہو تو وہ ہدایت پالینگے-(سورۃ البقرۃ:137)

صحابۂ کرام نے حضور اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی عظمت وتوقیر ،ادب وتکریم کا ایسا اعلی نمونہ پیش کیا کہ تاریخ میں جس کی نظیر نہيں ملتی۔

 

www.ziaislamic.com

 

 




submit

  AR: 515   
زجاجۃ المصابیح حنفی دلائل کا عظیم حدیثی انسائکلوپیڈیا
..........................................
  AR: 514   
قرآن کریم کے ہم پر حقوق
..........................................
  AR: 513   
استغفار تمام پریشانیوں کا حل
..........................................
  AR: 512   
روزہ فوائد وثمرات
..........................................
  AR: 511   
تحفظ شریعت ملت کی اولین ذمہ داری
..........................................
  AR: 510   
اسلام حقوق انسانی کامحافظ
..........................................
  AR: 509   
تعلیمات حضرت غوث اعظم رحمۃ اللہ علیہ
..........................................
  AR: 508   
حضرت غوث اعظم رحمۃ اللہ علیہ عظمت و جلالت
..........................................
  AR: 507   
حضرت امام ربانی رحمۃ اللہ علیہ کی عظمت اور مقبولیت
..........................................
  AR: 506   
قرآن کریم تمام علوم کا سرچشمہ
..........................................
  AR: 505   
امام حسین رشدوہدایت کے مینار اور حق صداقت کے معیار
..........................................
  AR: 504   
امام عالی مقام حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ کی عظمت و استقامت
..........................................
  AR: 503   
واقعۂ شہادت کا پُرسوز بیان
..........................................
  AR: 502   
راہ خدا میں خرچ کرنے کی فضيلت
..........................................
  AR: 501   
لیلۃ الجائزۃ (انعام والی رات)
..........................................
  AR: 500   
اعتکاف احکام ومسائل
..........................................
  AR: 499   
تذکرہ ام المؤمنین سیدہ عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہا
..........................................
  AR: 498   
ماہ رمضان المبارک کی فضیلت وعظمت پرمشتمل پچیس 25 احادیث شریفہ
..........................................
  AR: 497   
روزہ فوائد وثمرات
..........................................
  AR: 496   
روزہ فوائد وثمرات
..........................................
Copyright 2008 - Ziaislamic.com All Rights reserved