AR 484 : حج ایک اسلامی فریضہ

حج ایک اسلامی فریضہ

سورہ آل عمران میں اللہ تعالی کا ارشاد ہے:

وَلِلّٰهِ عَلَی النَّاسِ حِجُّ الْبَيْتِ مَنِ اسْتَطَاعَ اِلَيْهِ سَبِيْلًا.وَمَنْ کَفَرَ فَاِنَّ اللّٰهَ غَنِیٌّ عَنِ الْعٰلَمِيْنَ.

ترجمہ:اور اللہ ہی کے واسطے ان لوگوں پر اس مکان یعنی کعبۃ اللہ کا حج فرض ہے جو وہاں تک پہنچنے کی استطاعت اور قدرت رکھتے ہوں اور جو شخص اس کا منکر ہو (تواللہ تعالی کو اس کی کوئی پرواہ نہیں)اللہ تعالی تو تمام جہاں والوں سے غنی ہیں (کہ کسی کے نہ ماننے سے اللہ تعالی کا کوئی کام رکتا نہیں بلکہ انکار سے خود اس شخص کا ہی نقصان ہے)۔(سورۂ آل عمران پ4ع1،آیت نمبر:97)

قرآن کریم سے حج کی فرضیت کا ثبوت

تفسیرات احمدیہ میں لکھا ہے کہ آیت کریمہ:"وَلِلّٰهِ عَلَی النَّاسِ حِجُّ الْبَيْتِ مَنِ اسْتَطَاعَ اِلَيْهِ سَبِيْلًا "سے حج کی فرضیت ثابت ہے لیکن مطلقاً نہیں بلکہ اس شخص پر جو کعبۃ اللہ تک پہونچنے پر قادر ہو۔

 اور ہدایہ میں لکھا ہے کہ حج فریضہ محکمہ ہے؛ جس کی فرضیت کتاب اللہ(قرآن کریم) کی آیت شریفہ"وَلِلّٰهِ عَلَی النَّاسِ حِجُّ الْبَيْتِ مَنِ اسْتَطَاعَ اِلَيْهِ سَبِيْلًا " سے ثابت ہے۔

حج عمر بھر میں ایک بار فرض ہے

ہدایہ میں لکھا ہے کہ" حج" تمام عمر میں صرف ایک بار فرض ہے، اس لئے کہ حج کی فرضیت کا سبب بیت اللہ ہے اور وہ ایک ہے اور علم اصول کا قاعدہ ہے کہ جب تک سبب کی تکرار نہ ہو واجب کی تکرار نہیں ہوتی ۔

 حج کے عمر بھر میں ایک بار فرض ہونے پرصحیح مسلم کی یہ حدیث بھی دلالت کرتی ہے کہ حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ارشاد فرمایا:

أَيُّهَا النَّاسُ قَدْ فَرَضَ اللَّهُ عَلَيْكُمُ الْحَجَّ فَحُجُّوا. فَقَالَ رَجُلٌ أَكُلَّ عَامٍ يَا رَسُولَ اللَّهِ فَسَكَتَ حَتَّى قَالَهَا ثَلاَثًا فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ لَوْ قُلْتُ نَعَمْ لَوَجَبَتْ وَلَمَا اسْتَطَعْتُمْ.

 اے لوگو!تم پر حج فرض کیا گیا ہے تو تم حج کرو۔ ایک صاحب نے دریافت کیا: یارسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم! کیا ہر سال ہم پر حج فرض ہے؟ تو رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے سکوت اختیار فرمایا؛ یہاں تک کہ اس شخص نے تین مرتبہ یہ سوال دہرایا۔ پھر آپ نے ارشاد فرمایا کہ اگر تمہارے اس سوال پر میں" ہاں" کہہ دیتا تو ہر سال تم پر حج فرض ہوجاتا؛جس کی تم طاقت نہ رکھتے۔(صحیح مسلم،باب فرض الحج مرة فى العمر.حدیث نمبر:3321)

ملخص از:نورالمصابیح،جلد7

www.ziaislamic.com




submit

  AR: 514   
قرآن کریم کے ہم پر حقوق
..........................................
  AR: 513   
استغفار تمام پریشانیوں کا حل
..........................................
  AR: 512   
روزہ فوائد وثمرات
..........................................
  AR: 511   
تحفظ شریعت ملت کی اولین ذمہ داری
..........................................
  AR: 510   
اسلام حقوق انسانی کامحافظ
..........................................
  AR: 509   
تعلیمات حضرت غوث اعظم رحمۃ اللہ علیہ
..........................................
  AR: 508   
حضرت غوث اعظم رحمۃ اللہ علیہ عظمت و جلالت
..........................................
  AR: 507   
حضرت امام ربانی رحمۃ اللہ علیہ کی عظمت اور مقبولیت
..........................................
  AR: 506   
قرآن کریم تمام علوم کا سرچشمہ
..........................................
  AR: 505   
امام حسین رشدوہدایت کے مینار اور حق صداقت کے معیار
..........................................
  AR: 504   
امام عالی مقام حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ کی عظمت و استقامت
..........................................
  AR: 503   
واقعۂ شہادت کا پُرسوز بیان
..........................................
  AR: 502   
راہ خدا میں خرچ کرنے کی فضيلت
..........................................
  AR: 501   
لیلۃ الجائزۃ (انعام والی رات)
..........................................
  AR: 500   
اعتکاف احکام ومسائل
..........................................
  AR: 499   
تذکرہ ام المؤمنین سیدہ عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہا
..........................................
  AR: 498   
ماہ رمضان المبارک کی فضیلت وعظمت پرمشتمل پچیس 25 احادیث شریفہ
..........................................
  AR: 497   
روزہ فوائد وثمرات
..........................................
  AR: 496   
روزہ فوائد وثمرات
..........................................
  AR: 495   
عشرۂ ذی الحجہ فضائل واحکام
..........................................
Copyright 2008 - Ziaislamic.com All Rights reserved