AR 516 : زجاجۃ المصابیح انمول علمی تحفہ اورعظیم تحقیقی سرمایہ

زجاجۃ المصابیح انمول علمی تحفہ اورعظیم تحقیقی سرمایہ

عارف باللہ حضرت ابو الحسنات سید عبد اللہ شاہ نقشبندی مجددی قادری محدث دکن رحمۃ اللہ علیہ برصغیر کی ایک عبقری شخصیت ہے،آپ نے امت کی ہدایت ورہنمائی کے لئے کئی ایک علمی وتحقیقی تالیفات اور تصنیفات یادگار چھوڑیں، جو تمام امت کے لئے انمول علمی تحفہ اور عظیم تحقیقی سرمایہ ہے،آپ کی گراں قدر خدمات پر جس قدربھی عقیدت کے نذرانے پیش کئے جائیں کم ہے۔ علوم و فنون کے آفتاب ہونے کے ساتھ ساتھ آپ دور اندیش مفکر صاحب رائے دانشور تھے۔آپ کی تمام خدمات کے درمیان خدمت حدیث شریف’’زجاجۃ المصابیح‘‘ کی تالیف نمایاں حیثیت کی حامل ہے چنانچہ آپ کی ہمہ جہت اور جامع کمالات شخصیت بطور خاص محدث دکن سے مشہور ہوئی۔’’زجاجۃ المصابیح‘‘میں آپ نے ان احادیث ودلائل کو نہایت عرق ریزی سے جمع فرمایا جو امام اعظم ابو حنیفہ رحمۃ اللہ علیہ کے مستنبطہ مسائل فقیہ کی تائید وتوثیق کرتی ہیں۔دنیائے علم وفن نے آپ کی اس عظیم تصنیف منیف کو قدرو وقعت کی نگاہوں سے دیکھا ہے،عرب وعجم کے علماء وفضلاء نے اس کتاب کی تالیف کو امت پر عظیم احسان قرار دیااور کہا کہ صدیوں سے دنیا بھر کر احناف کے سرپرجو قرض تھا اسے حیدرآباد دکن کے ایک بزرگ ،دکن کے محدث نے اداکردیا۔

 Ø³Ø§Ù„ہاسال سے درس نظامی میں علامہ خطیب تبریزی رحمۃ اللہ علیہ Ú©ÛŒ ’’مشکوۃ المصابیح‘‘پڑھائی جاتی ہے، مولف کتاب Ù†Û’ اس کتاب میں ان احادیث مبارکہ Ú©Ùˆ جمع کیا جو امام شافعی رحمۃ اللہ علیہ Ú©Û’ مستنبطہ مسائل Ú©ÛŒ تائید وتوثیق کرتی ہیں۔دنیاکا ایک بڑا حصہ امام اعظم ابو حنیفہ رحمہ اللہ کا مقلد Ùˆ پیروکار ہے،لیکن احناف Ú©Û’ پاس مستقل کوئی مشکوۃ Ú©Û’ طرز پر حدیث Ú©ÛŒ کتاب نہ تھی،دلائل متفرق کتابوں میں الگ الگ تھے،اللہ تعالی Ù†Û’ یہ سعادت حضرت محدث دکن رحمۃ اللہ علیہ Ú©Û’ حصہ میں رکھی تھی،آپ خود فرماتے ہیں :’’مشکوٰۃ المصابیح Ú©Û’ بنظر غائر مطالعہ Ú©Û’ بعد میرے دل میں اکثر یہ بات رہا کرتی تھی کہ مشکوٰۃ Ú©ÛŒ طرز پر ایک کتاب Ù„Ú©Ú¾ÙˆÚº جس میں اپنے امام اعظم حضرت ابو حنیفہ Ú©Û’ مسلک Ú©Ùˆ اختیار کروں، مگر میری بے بضاعتی مجھے اس مرتبہ Ú©Û’ حاصل کرنے سے روک رہی تھی کہ اسی زمانے میں‘ میں Ù†Û’ خواب دیکھا کہ روزِ رسالت Ú©Û’ درخشاں آفتاب اور شب تاریک Ú©Û’ منور ماہتاب، نور ہدایت اور تاریکیوں Ú©Û’ روشن چراغ ہمارے پیارے اور محبوب آقائے نامدار حضرت نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم تشریف فرما اور جلوہ افروز ہوئے اور سلام فرمایا، میں Ù†Û’ سلام کا جواب عرض کیا۔میری جان آپ پر قربان۔ آپ Ù†Û’ اپنے سینۂ مبارک سے۔ جو علم اور حکمتوں کا سر چشمہ ہے ۔چمٹا کر Ú¯Ù„Û’ سے لگالیا، جب میں نیند سے خوش خوش بیدار ہوا تو اس نعمت پر اللہ تعالی Ú©ÛŒ حمد Ú©ÛŒ اور اس کا شکر ادا کیا۔ الغرض اس نیک اور مبارک خواب سے میرا سینہ Ú©Ú¾Ù„ گیا،اور اس کام Ú©ÛŒ تمام مشکلات مجھ پر آسان ہوگئیں، میں Ù†Û’ اس کتاب Ú©ÛŒ تکمیل Ùˆ تالیف کا عزم کرلیا اور اس Ú©Û’ Ù„Ú©Ú¾Ù†Û’ Ú©Û’ لئے کمرِ ہمت باندھ لی، بحمداللہ !میں Ù†Û’ اس کتاب میں ہر حدیث Ú©Û’ درج کرتے وقت ضرور حضرت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم پر درود بھیجا ہے اور میں نے’’زجاجۃ المصابیح‘‘ اس کتاب کا نام تجویز کیا‘‘۔

یہ کتاب پانچ ضخیم جلدوں پر مشتمل ہے،امام بخاری کے طرز پرحضرت محدث دکن نے ہر کتاب کے آغاز میں اس سے متعلقہ آیات قرآنیہ درج فرمائی،احادیث وآثار جمع کئے اور ان کے تحت نفیس علمی مباحث حاشیہ میں رقم فرمائی۔اس بافیض کتاب کے نفع کو عام سے عام تر کرنے کی غرض سے اس کااردومیں ترجمہ کیا گیا۔جو ’’نور المصابیح‘‘کے نام سے بائیس جلدوں میں طبع ہوئی۔

مسلمانوں حدیث شریف کے اس عظیم ذخیرہ سے استفادہ کریں اور اپنی زندگیوں کو سنت کے اجالوں سے روشن کریں۔

 




submit

  AR: 516   
زجاجۃ المصابیح انمول علمی تحفہ اورعظیم تحقیقی سرمایہ
..........................................
  AR: 515   
زجاجۃ المصابیح حنفی دلائل کا عظیم حدیثی انسائکلوپیڈیا
..........................................
  AR: 514   
قرآن کریم کے ہم پر حقوق
..........................................
  AR: 513   
استغفار تمام پریشانیوں کا حل
..........................................
  AR: 512   
روزہ فوائد وثمرات
..........................................
  AR: 511   
تحفظ شریعت ملت کی اولین ذمہ داری
..........................................
  AR: 510   
اسلام حقوق انسانی کامحافظ
..........................................
  AR: 509   
تعلیمات حضرت غوث اعظم رحمۃ اللہ علیہ
..........................................
  AR: 508   
حضرت غوث اعظم رحمۃ اللہ علیہ عظمت و جلالت
..........................................
  AR: 507   
حضرت امام ربانی رحمۃ اللہ علیہ کی عظمت اور مقبولیت
..........................................
  AR: 506   
قرآن کریم تمام علوم کا سرچشمہ
..........................................
  AR: 505   
امام حسین رشدوہدایت کے مینار اور حق صداقت کے معیار
..........................................
  AR: 504   
امام عالی مقام حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ کی عظمت و استقامت
..........................................
  AR: 503   
واقعۂ شہادت کا پُرسوز بیان
..........................................
  AR: 502   
راہ خدا میں خرچ کرنے کی فضيلت
..........................................
  AR: 501   
لیلۃ الجائزۃ (انعام والی رات)
..........................................
  AR: 500   
اعتکاف احکام ومسائل
..........................................
  AR: 499   
تذکرہ ام المؤمنین سیدہ عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہا
..........................................
  AR: 498   
ماہ رمضان المبارک کی فضیلت وعظمت پرمشتمل پچیس 25 احادیث شریفہ
..........................................
  AR: 497   
روزہ فوائد وثمرات
..........................................
Copyright 2008 - Ziaislamic.com All Rights reserved