***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > تلاش کریں

Share |
سرخی : f 1252    آنکھ زنا کرتی ہے
مقام : ایل بی نگر،انڈیا,
نام : تحسین فاطمہ
سوال:    

میں صراط مستقیم میں آپ کے جوابات پابندی سے پڑھتی ہوں ‘میرا ایک سوال ہے: ’’آنکھ زنا کرتی ہے‘ ‘، اس جملہ کا کیا مطلب ہے؟ اس کا جواب عنایت فرمائیں ۔


............................................................................
جواب:    

آنکھ زنا کرتی ہے‘ یہ دراصل ایک حدیث مبارک کا حصہ ہے‘ حضرت نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے زنا میں مختلف اعضاء کا حصہ قرار دیا‘ اس ارشاد گرامی کا مطلب یہ ہے کہ نگاہوں کی حفاظت کی جائے ‘بدنظری اور بدنگاہی سے پرہیز کیا جائے‘ مرد حضرات کی نگاہیں غیرمحارم کی طرف اٹھنے نہ پائیں اور خواتین کی نظریں اجنبی مردوں کی طرف بڑھنے نہ پائیں‘ اگر اس کے برعکس نگاہیں ایک دوسرے کی طرف بڑھیں گی تو یہ عمل آنکھ کا گناہ ہے اور آنکھ سے کئے جانے والے اس گناہ کو زنا قرار دیا کیونکہ یہی عمل زنا کا باعث بنتا ہے ‘ محض بدنگاہی پر زنا کی حد نافذ نہیں ہوتی تاہم گناہ کبیرہ ہونے میں اسی کے مماثل ہے ، چنانچہ مسند امام احمد میں حدیث پاک ہے: عن أبی ہریرۃ أن رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم قال لکل بنی آدم حظ من الزنا فالعینان تزنیان وزناہما النظر والیدان تزنیان وزناہما البطش والرجلان یزنیان وزناہما المشی والفم یزنی وزناہ القبل والقلب یہوی ویتمنی والفرج یصدق ذلک أو یکذبہ۔ ترجمہ: سیدنا ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضرت رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: زنا میں انسان کے ہر عضو کا حصہ ہوتا ہے‘ آنکھیں زنا کرتی ہیں اور ان کا زنا دیکھنا ہے‘ ہاتھ زنا کرتے ہیں اور ان کا زنا پکڑنا اور گرفت کرنا ہے‘ پیر زنا کرتے ہیں اور ان کا زنا چلنا ہے‘ منہ زنا کرتا ہے اس کا زنا بوسہ وکنار ہے ‘دل خواہش کرتا اور تمنا وآرزو کرتا ہے جب کہ شرمگاہ اس کی تصدیق کرتی ہوئی زنا میں مبتلا ہوتی ہے یا اسے جھٹلاکر زنا سے باز رہتی ہے۔ ﴿مسند امام احمد ‘ حدیث نمبر8752﴾ اس گناہ سے بچنے کی تاکید کرتے ہوئے اللہ تعالی نے قرآن کریم میں ارشاد فرمایا: قُلْ لِلْمُؤْمِنِیْنَ یَغُضُّوْا مِنْ أَبْصَارِہِمْ وَیَحْفَظُوْا فُرُوْجَہُمْ ۔ ترجمہ: اے حبیب صلی اللہ علیہ وسلم! ایمان والے مردوں سے فرمادیجئے کہ اپنی نگاہیں نیچی رکھیں اور اپنی شرمگاہوں کی حفاظت کریں۔ (سورۃالنور۔ 30) اور خواتین کے لئے علٰحدہ ارشاد فرمایا: وَقُلْ لِلْمُؤْمِنَاتِ یَغْضُضْنَ مِنْ أَبْصَارِہِنَّ وَیَحْفَظْنَ فُرُوْجَہُنَّ ۔ ترجمہ: اور ایمان والی عورتوں سے فرمادیجئے کہ اپنی نگاہیں نیچی رکھیں اور اپنی شرمگاہوں کی حفاظت کریں۔ واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com