***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > تلاش کریں

Share |
سرخی : f 1254    غیر مسلم لڑکی کے ساتھ نکاح یا تعلقات کا حکم
مقام : حیدرآباد ، انڈیا,
نام : محمد رضوان
سوال:    

السلام علیکم ، میرا سوال یہ کہ میراایک دوست مسلم لڑکی کے ساتھ گھوم رہا ہے اور وہ اس لڑکی سے شادی کرنا چاہتا ہے ، لیکن کیا یہ جائز ہے ؟


............................................................................
جواب:    

اسلام حیاء وپاکیزگی کی تعلیم دیتا ہے ، عفت وپاکدامنی سکھاتا ہے ،ستر وپردے کے احکام دیتا ہے، اجنبی مرد و عورت کا آپس میں ناجائز تعلق قائم کرنا سخت ترین گناہ اورغضب الہی کی آگ کو بڑھکا نے والا سنگین جرم ہے – شریعت مطہرہ نے کسی مسلمان غیر محرم کے ساتھ اختلاط ،میل ملاپ اور ان سے ناجائز تعلقات رکھنے کو ناجائز وحرام قرار دیاہے ،اللہ تعالی نے ناجائز تعلقات وفواحش کا ارتکاب تو کجا ان کے قریب جانے سے بھی منع فرمایا،ارشاد باری تعالی ہے: وَلَا تَقْرَبُوا الْفَوَاحِشَ مَا ظَهَرَ مِنْهَا وَمَا بَطَن-(سُورَة الْأَنْعَام،151) ترجمہ:اور بے حیائیوں کے پاس نہ جاؤ جو ان میں کھلی ہیں اور جو چھپی ہیں- وَلَا تَقْرَبُوا الزِّنَا إِنَّهُ كَانَ فَاحِشَةً وَسَاءَ سَبِيلًا- ترجمہ:اور بد کاری کے قریب نہ جاؤ ،بے شک وہ بے حیائی ہے اور بہت ہی بری راہ ہے-(سُورَة الْإِسْرَاء،32) حضرت نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد مبارک ہے : مَنْ نَظَرَ إلَى مَحَاسِنِ امْرَأَةٍ أَجْنَبِيَّةٍ عَنْ شَهْوَةٍ صُبَّ فِي عَيْنَيْهِ الْآنُكُ يَوْمَ الْقِيَامَة- ترجمہ:جو کوئی شہوت کے ساتھ کسی اجنبی عورت کے مقامات زینت کودیکھتا ہے تو قیامت کے دن اس کی آنکھوں میں سیسہ پگلا کر ڈالا جائےگا۔ (ہدایہ ،کتاب الکراہیۃ ،ج4،ص458) غیر محرم کو چھونا اور مس کرنا سخت ممنوع ہے ، اس بارے میں احادیث شریفہ میں وعیدیں آئی ہیں چنانچہ ہدایہ ،کتاب الکراہیۃ ،ج4،ص459، میں ہے : مَنْ مَسَّ كَفَّ امْرَأَةٍ لَيْسَ مِنْهَا بِسَبِيلٍ وُضِعَ عَلَى كَفِّهِ جَمْرَةٌ يَوْمَ الْقِيَامَة ۔ ترجمہ : جوشخص کسی غیر محرم عورت کے ہاتھ کوچھوئے تو بروزقیامت اسکے ہاتھ پرانگارہ رکھا جائےگا۔ (ہدایہ ،کتاب الکراہیۃ ،ج4،ص459) اگر آپ کے دوست چاہتے ہیں کہ اس لڑکی سے نکاح کریں تو اس میں شرعا کوئی حرج نہیں۔ واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ ، ابوالحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن۔

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com