***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > تلاش کریں

Share |
سرخی : f 1417    شوہر سے دور رہنے کی وجہ سے کیا رشتۂ نکاح ختم ہوجاتاہے؟
مقام : فلوریڈ,
نام : سمرن نذیر
سوال:    

السلام علیکم مفتی صاحب! آپ کیسے ہیں؟ شکریہ آپ نے میرے ای میل کا جواب دیا‘ بڑی مہربانی‘ یہاں فلوریڈا میں ایک امام صاحب ہیں‘ وہ بہت ہی تعلیم یافتہ شخص ہیں‘ میرے بھائی نے اُن سے بھی بات کی تھی ‘ انہوں نے بھی یہی کہا اگر میاں بیوی دونوں اتنے سالوں سے ساتھ نہیں رہتے تو ان کا رشتہ ختم ہوگیا ہے اور یہاں ایک شریعت بورڈ ہے ان سے بھی بات کی‘ اُن لوگوں نے بھی یہی کہا کہ ہماری جدائی اسلامی طریقہ سے ہوچکی ہے‘ آپ کا کہنا یہ ہے کہ میں ان سے بات کروں وہ تو کسی کی بھی بات سننے کے لئے راضی نہیں ہیں‘ تو کیسے بات ہوگی؟ ان کو میں نے بہت موقع دیا مگر کچھ بھی حاصل نہیں‘ ان کو جوان لڑکیاں پسند آتی ہیں‘ تین بچوں کے بعد میں تھوڑا موٹی ہوگئی ہوں‘ وہ چاہتے ہیں میں شادی کے وقت جیسی تھی ویسی ہی رہوں تو یہ ناممکن بات ہے اور وہ مجھے صرف اپنے بستر کی زینت بناتے ہیں‘ اس کے بعد وہ کون اور میں کون تو زندگی ایسی تو نہیں ہوتی ہے او روہ میرے ساتھ رہنا بھی نہیں چاہتے تو اس صورت میں‘ میں کیا کروں؟ میرے ماموں اور والد بہت عمر رسیدہ ہیں‘ اس عمر میں ان کے لئے یہ سب دیکھنا اچھا نہیں‘ اب آپ ہی کوئی حل نکال کر مجھے بتائیے میں کیا کروں؟ میرا شوہر سیدھا ہونے والا انسان نہیں‘ میرے چاچا‘ میرے بھائی‘ میرے ماں باپ اور خود میں نے اور ان کے دوستوں نے بھی بہت کوشش کی مگر کچھ حاصل نہیں‘ اب جو بھی ہو آپ ہی میری مدد کرو گے‘ برائے مہربانی۔ آپ کی دکھیاری بہن‘ جواب کا انتظار رہے گا‘ اپنا خیال رکھئے۔ اللہ حافظ


............................................................................
جواب:    

وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ و برکاتہ! شریعت مطہرہ کی رو سے صرف شوہر سے دور رہنے کی وجہ رشتۂ نکاح ختم نہیں ہوتا‘ طلاق یا خلع کے ذریعہ رشتۂ نکاح منقطع کیا جاسکتا ہے‘ آپ اپنے شوہر سے معلوم کیجئے کہ کیا وہ طلاق دیتے ہیں‘ اگر وہ طلاق دینے پر راضی نہ ہوں تو آپ ان سے مہر معاف کرنے کے بدلے یا مال کے عوض خلع کا مطالبہ کریں‘ اگر آپ کے شوہر خود طلاق دیں یا خلع پر راضی ہوجائیں تو اسلامی قانون کے مطابق آپ دونو ں کے درمیان نکاح ختم ہوجائے گا اور تین ماہواری عدت گزارنے کے بعد آپ دوسری شادی کرسکتی ہیں۔ واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com