***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > تلاش کریں

Share |
سرخی : f 1475    نماز میں ایک سجدہ بھول جائے تو کیا حکم ہے؟
مقام : آسمان گڑھ ، حیدرآباد,
نام : صفی خالد
سوال:    

امام صاحب ایک رکعت میں ایک ہی سجدہ کرکے دوسری رکعت کے لئے اٹھ کھڑے ہوں تو کیا دوسری رکعت میں تین سجدے کریں گے؟ یا کوئی اور صورت ہوگی؟ بیان فرمائیں۔ شکریہ۔


............................................................................
جواب:    

ہر رکعت میں دو سجدے فرض و رکن کی حیثیت رکھتے ہیں‘ فرائض نماز سے کسی فرض کی ادائیگی میں تاخیر سے سجدۂ سہو واجب ہوتا ہے اور فرض فوت ہونے سے نماز باطل ہوتی ہے۔ اگر امام صاحب کسی رکعت میں ایک ہی سجدہ کرکے دوسری رکعت کے لئے کھڑے ہوجائیں تو دوسری رکعت میں یا التحیات سے پہلے یاد آجائے تو فوت شدہ سجدہ کرلیں اور تاخیر رکن کی وجہ سے سجدۂ سہو بھی کریں‘ اگر التحیات کے بعد یاد آئے تو فوت شدہ سجدہ کرکے التحیات پڑھیں‘ پھر سجدۂ سہو کریں۔ اور اگر سلام پھیرنے کے ساتھ ہی یاد آجائے جبکہ سینہ قبلہ سے نہ پھرے اور منافی نماز کوئی عمل نہ ہو تب بھی فوت شدہ سجدہ کرکے التحیات پڑھیں اور سجدۂ سہو کریں۔ فتاویٰ عالمگیری ج1‘ کتاب الصلوٰۃ‘ واجبات نماز کے بیان میں ہے: لو نسی سجدۃ من الرکعۃ الاولی و قضاھا فی اخر الصلوۃ جاز .... لو قعد قدر التشھد ثم تذکر ان علیہ سجدۃ او نحوھا بطل القعود۔ واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com