***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > تلاش کریں

Share |
سرخی : f 1494    مقام شہادت کی نشاندہی
مقام : یاقوت پورہ,
نام : نبیل احمد
سوال:    

مجھے ایک صاحب نے بتایاکہ امام حسین جہاں شہید ہوئے وہ مقام حضرت علی رضی اللہ عنہ نے لوگوں کو بتایا کہ یہاں شہداء شہید ہوں گے ۔ کیا یہ بات صحیح ہے ؟ اگر عاشورہ کے دن یہ جواب شائع کریں تو بڑی مہربانی ہوگی ۔


............................................................................
جواب:    

آپ نے جس واقعہ کے بارے میں دریافت کیا ہے اُسے علامہ محمد بن یوسف صالحی رحمۃ اللہ علیہ (متوفی 942؁ ھ) نے سبل الھدٰی والرشاد میں محدث ابن سعد وغیرہ کے حوالہ سے یوں نقل کیا ہے : عن علی رضی اللہ تعالی عنہ أنہ مر بکربلاء ، وہو ذاہب إلی صفین، فسأل عن اسمہا، فقیل:کربلاء ، فنزل فصلی عند شجرۃ ہنالک، فقال: یقتل ہاہنا شہداء وہم خیر الشہداء ، یدخلون الجنۃ بغیر حساب، وأشار إلی مکان فعلموہ بشء، فقتل فیہ الحسین - رضی اللہ تعالی عنہ ۔ترجمہ : حضرت علی رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ آپ مقام کربلا کے پاس سے گزرے جب کہ مقام صفین تشریف لے جارہے تھے ، آپ نے اس مقام کا نام دریافت فرمایا، عرض کیا گیا : اس مقام کا نام کربلا ہے ، تو حضرت علی رضی اللہ عنہ نے سواری سے اُتر کر وہاں ایک درخت کے نزدیک نماز ادا فرمائی اور فرمایا : یہاں شہداء کو شہید کیا جائے گا اور وہ بہترین شہداء ہیں ، حساب وکتاب کے بغیر جنت میں داخل ہوں گے اور آپ نے ایک جگہ کی جانب اشارہ فرمایا: تو لوگوں نے وہاں نشان لگایا ، اُسی مقام پر امام حسین رضی اللہ عنہ کی شہادت واقع ہوئی ۔ (سبل الہدی والرشاد،جماع ابواب بعض فضائل آل رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ، الباب الثانی عشر فی بعض ما ورد مختصا بسیدنا الحسین رضی اللہ عنہ من المناقب غیر ماتقدم)

واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ ، ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ حیدرآباد دکن۔

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com