***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > تلاش کریں

Share |
سرخی : f 1496    امام حسین کا رونا حضور صلی اللہ علیہ وسلم کیلئے باعث تکلیف
مقام : این ٹی آر نگر,
نام : صفی الدین احمد
سوال:    

میں نے امام حسین کے بارے میں ایک بات سنی تھی کہ بچپن میں آپ جب روتے تھے تو نبی صلی اللہ علیہ وسلم کو اچھا نہیں لگتا تھا اور آپ کو تکلیف ہوتی تھی ، میں یہ بات اپنے ایک دوست کو بتائی تو اُن کو اطمنان نہیں ہوا ، لیکن میرے پاس حدیث کا حوالہ نہیں تھا ، پوری حدیث بھی یاد نہیں ، اگر آپ اس کے بارے میں حدیث بتادیں تو بڑی مہربانی ہوگی ۔


............................................................................
جواب:    

آپ نے سوال میں جس روایت کی جانب اشارہ کیا ہے اُس کو امام طبرانی نے اپنی معجم کبیر میں روایت کیا ہے : عن یزید بن أبی زیاد قال خرج النبی صلی اللہ علیہ وسلم من بیت عائشۃ رضی اللہ تعالی عنہا ، فمر علی بیت فاطمۃ ، فسمع حسینا یبکی رضی اللہ تعالی عنہ فقال ألم تعلمی أن بکاء ہ یؤذینی ۔

ترجمہ:حضرت یزید بن ابی زیاد رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے حضرت رسول اللہ صلی علیہ وسلم ام المومنین عائشہ رضی اللہ عنہاکے حجرئہ مبارکہ سے باہرتشریف لائے اور حضرت فاطمہ رضی اللہ عنھا کے دولت خانہ سے آپ کا گزر ہوا امام حسین رضی اللہ عنہ کی رونے کی آوازسنی توارشادفرمایا:بیٹی!کیا آپ کو نہیںجانتیں! ان کارونا مجھے تکلیف دیتا ہے۔(المعجم الکبیر للطبرانی، حدیث نمبر: 2778۔ نورالابصارفی مناقب ال بیت النبی المختار ص139 )

واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ ، ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ حیدرآباد دکن۔

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com