***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > تلاش کریں

Share |
سرخی : f 1540    شادی کے موقع پر غبارے بیچنا کیساہے؟
مقام : بورہ بنڈہ ، انڈیا,
نام : ثاقب
سوال:    

مفتی صاحب ! میرا سوال یہ ہے کہ میں دن میں گھریلو سامان بیچتا ہوں ، جس پر میرا گزارا نہیں ہوتا اس لئے رات میں بھی کچھ نہ کچھ کام کرلیتا ہوں ،چند دنوں سے میں غبارے (Baloon) بیچ رہا ہوں ، قریبی محلہ کے شادی خانہ میں شادی یا ولیمہ ہوتا ہے تو وہاں جاتا ہوں اور چھوٹے بچے آکر غبارے خریدتے ہیں ؟ کیا میرے لئے اس طرح غبارے کی تجارت کرنا درست ہے ؟


............................................................................
جواب:    

چھوٹے بچوں کے کھیلنے کے لئے غبارے اور اس جیسی چیزوں کی تجارت کرنے میں کوئی حرج نہیں ، البتہ ایسے کھیل جس کے ذریعہ دوسروں کو تکلیف ہوتی ہے یا بچوں کی عادت خراب ہوتی ہے اس سے احتراز لازم وضروری ہے ۔ 

        رد المحتار میں ہے :عن أبی یوسف: یجوز بیع اللعبۃ وأن یلعب بہا الصبیان .ا ہ۔ .(رد المحتار، کتاب الصلوٰۃ ، لا باس بتکلیم المصلی وجابتہ براسہ)

واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com