***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > تلاش کریں

Share |
سرخی : f 1550    زندہ مرغی تول کر فروخت کرنے کا حکم
مقام : نواب صاحب کنٹہ، انڈیا,
نام : شیخ مقصود
سوال:    

مفتی صاحب ! ایک مرتبہ میں مرغی کا گوشت خرید نے کے لئے چکن سنٹر گیا اور چار کیلو چکن لے کر گھر آیا ، گھر میں سب لوگوں نے کہا کہ یہ بہت کم معلوم ہوتا ہے ، اور مجھ کو بھی بہت کم نظر آیا ، لیکن میں مرغیاں تولتے وقت برابر دیکھا کہ وہ چار کیلو کے تھے، ان کے بال ، پَر وغیرہ نکالنے کی وجہ سے خالص گوشت بہت کم تھا،میرا سوال یہ ہے کہ کیا شریعت میں زندہ مر غی تول کر بیچنے کی اجازت ملتی ہے ، یا صرف ذبح کرنے کے بعد گوشت بیچنا چاہئے ؟ برائے مہربانی جواب عنایت فرمائیں!


............................................................................
جواب:    

زندہ مرغی تول کر فروخت کرنا شرعًا جائز ہے ، چونکہ اصل مبیع یعنی بیچی جانے والی مرغی معلوم اورمتعین ہے لہذا اس کی خرید وفروخت ازروئے شریعت ممنوع نہیں ۔

        جیساکہ بدائع الصنائع میں ہے :( وأما ) رکن البیع : فہو مبادلۃ شیء مرغوب بشیء مرغوب ، وذلک قد یکون بالقول ، وقد یکون بالفعل. (بدائع الصنائع فی ترتیب الشرائع ، کتاب البیوع ، بیان رکن البیع)

واللہ اعلم بالصواب

سیدضیاءالدین عفی عنہ

شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ

بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔

حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com