***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****
 
f75: محرم کے بغیر عورت کے حج کا حکم <Back
سوال
ہمارے پڑوس میں ایک خاتون ہیں جو حج کا ارادہ رکھتی ہیں ،ان کے ساتہ سفر حج میں کوئی محرم نہیں ہے، کیا وہ فقہ حنفی کی روشنی محرم کے بغیر حج کو جاسکتی ہیں یا واقعتاً محرم کا ہونا ضروری ہے، بعض لوگ کہتے ہیں کہ محرم کے بغیر حج فرض ہی نہیں ہوتا اور محرم کے سفر حج کا نفقہ بھی عورت کے ذمہ ہے کیا ان کا یہ کہنا درست ہے؟ براہ کرم تشفی بخش جواب عنایت فرمائیں
جواب
: عورت خواہ جوان ہو یا عمر رسیدہ حج واجب ہونے کے لئے اس کے ساتہ محرم کا ہونا شرط ہے، اسی طرح محرم کے سفر حج کا نفقہ بھی عورت کے ذمہ واجب ولازم ہے،اگر محرم نہ ہوتو عورت پر ازروئے شرع حج واجب ہی نہیں ہوتا، لہذا کوئی خاتون غیر محرم مردوں کے ساتہ حج کونہیں جاسکتی ونیز بغیر محرم کے خواتین کے قافلہ کے ساتہ بھی نہیں جاسکتی ، محرم سے مراد خوداس کا شوہر ہے یا وہ مرد جس سے اس عورت کا نکاح قرابت، رضاعت یامصاہرت کے سبب ہمیشہ کے لئے حرام ہو اور محرم کے شرائط میں یہ ہیکہ وہ عاقل وبالغ، نیک وصالح اورامانتدارہو، فاسق وفاجر،خائن وبدخواہ نہ ہو- فتاوی عالمگيری ج1 كتاب المناسك، الباب الأول في تفسير الحج وفرضيته ووقته وشرائطه وأركانه وواجباته وسننه وآدابه ومحظوراته، ص219/218 میں ہے : ( وَمِنْهَا الْمَحْرَمُ لِلْمَرْأَةِ ) شَابَّةً كَانَتْ أَوْ عَجُوزًا إذَا كَانَتْ بَيْنَهَا وَبَيْنَ مَكَّةَ مَسِيرَةُ ثَلَاثَةِ أَيَّامٍ هكَذَا فِي الْمُحِيطِ ، وَإِنْ كَانَ أَقَلَّ مِنْ ذَلِكَ حَجَّتْ بِغَيْرِ مَحْرَمٍ كَذَا فِي الْبَدَائِعِ وَالْمَحْرَمُ الزَّوْجُ ، وَمَنْ لَا يَجُوزُ مُنَاكَحَتُهَا عَلَى التَّأْبِيدِ بِقَرَابَةٍ أَوْ رَضَاعٍ أَوْ مُصَاهَرَةٍ كَذَا فِي الْخُلَاصَةِ ۔ وَيُشْتَرَطُ أَنْ يَكُونَ مَأْمُونًا عَاقِلًا بَالِغًا حُرًّا كَانَ أَوْ عَبْدًا كَافِرًا كَانَ أَوْ مُسْلِمًا هَكَذَا فِي فَتَاوَى قَاضِي خَانْ۔۔۔۔ وَتَجِبُ عَلَيْهَا النَّفَقَةُ وَالرَّاحِلَةُ فِي مَالِهَا لِلْمَحْرَمِ لِيَحُجَّ بِهَا ،/font> > ترجمہ:وجوب حج کے شرائط میں سے محرم کا ہونا ہے ، چاہے عورت جوان ہویا ہےعمر رسیدہ جبکہ مکہ مکرمہ تک سفرتین دن کا ہو،اور محرم شوہریا وہ شخص ہے جس سے نکاح ہمیشہ کے لئے حرام ہے، یہ \'\'حرمت \'\' نکاح کے رشتہ کی وجہ سے ہویا رضاعت کی وجہ سے، یہ بھی ضروری ہیکہ محرم محفوظ کردار کا ہو،عاقل وبالغ ہوخواہ غلام ہو یا آزاد ،محرم کے تمام اخرجات عورت کے ذمہ ہوں گے- واللہ اعلم بالصواب- سید ضیاء الدین عفی عنہ نائب شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ – وبانی ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر -
All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com