***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > نماز کا بیان > نماز کی سنتیں اور مستحبات

Share |
سرخی : f 1099    بوقت دعا ہاتھ کس طرح اٹھائیں ؟
مقام : محبوب نگراے پی،انڈیا,
نام : غوث محی الدین
سوال:     بعض لوگ دعاء میں اپنے ہاتھوں کو نیچے رکھتے ہیں ،بعض بلند کرتے ہیں اور بعض لوگ اپنے ایک ہاتھ کودوسرے ہاتھ پر رکھتے ہیں ،دعا کرتے وقت دونوں ہاتھوں کو کس طرح رکھناچاہئیے اور کہاں تک اٹھا نا چاہئیے؟
............................................................................
جواب:     دعا کرنے والے کیلئے مستحب طریقہ یہ ہے کہ وہ اپنے دونوں ہاتھ سینہ تک اٹھائے ‘ ہاتھوں کا رخ آسمان کی طرف رکھے اور دعا کے وقت دونوں ہاتھوں کے درمیان تھوڑا سا فاصلہ رکھنا اور دونوں کو دراز کرنا بہترہے ۔
جیسا کہ جامع ترمذی شریف ج 2ابواب الدعوات ص 176میں حدیث پاک ہے :عن عمربن الخطاب رضی اللہ عنہ قال کان رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اذارفع یدیہ فی الدعاء لم یحطہما حتی یمسح بھماوجھہ۔ ترجمہ :حضرت عمربن خطاب رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضرت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم دعاء کیلئے جب اپنے مبارک ہاتھ اُٹھاتے تو اپنے چہرۂ مبارک پر پھیرنے سے پہلے نہ چھوڑتے ۔
(جامع ترمذی شریف ج 2ابواب الدعوات ص 176باب ماجاء فی رفع الایدی عند الدعائ)
در مختار ج 1،باب صفۃ الصلاۃ،ص375، میں ہے:
(فیبسط یدیھ )حذاء صدرہ (نحوالسماء) لانھا قبلۃ الدعاء ویکون بینھما فرجۃ۔
واللہ اعلم بالصواب –
سیدضیاءالدین عفی عنہ
شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ
بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com
حیدرآباد دکن۔
All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com