***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > نماز کا بیان > غسل ،تجہیز وتکفین اور تدف

Share |
سرخی : f 1106    خالق کی نافرمانی میں کسی مخلوق کی اطاعت نہیں
مقام : انڈیا,
نام : احمد
سوال:     السلام علیکم! کیا کسی بھی وجہ سے کسی کی تدفین میں نہیں جانا ٹھیک ہے؟ والدین کی اجازت نہیں تھی۔
............................................................................
جواب:     وعلیکم السلام و رحمۃ اللہ وبرکاتہٗ! اولاد کے لئے والدین کی فرمانبرداری کرنا ضروری ہے جب تک کہ وہ خلاف شریعت کسی کام کا حکم نہ دیں،حضور پاک صلی اللہ علیہ وسلم نے نافرمانی او رمعصیت میں مخلوق کی اطاعت کرنے سے منع فرمایاہے ۔ جیسا کہ مصنف ابن ابی شیبہ میں حدیث پاک ہے:

  عن الحسن قال قال رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم لا طاعۃ لمخلوق فی معصیۃ الخالق۔
حضرت حسن بصری رضی اللہ تعالیٰ عنہ فرماتے ہیں ‘ حضرت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: خالق کی نافرمانی میں کسی مخلوق کی اطاعت نہیں۔(مصنف ابن ابی شیبہ ،کتاب ا لسیر،باب فی امام السریۃ یامرہم بالمعصیۃ ،حدیث نمبر:33717﴾
تدفین میں شرکت فرض عین نہیں بلکہ فرض کفایہ ہے‘ موقع ہوتو ضرورشرکت کریں کیونکہ اسمیں اجروثواب کی بشارت دی گئی ،چنانچہ صحیح بخاری شریف ج 1 کتاب الجنائز میں ص 177میں ہے ۔۔:

حدثنی عبدالرحمن الاعرج ان  ابا ھریرۃ قال قال رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم  من شھد الجنازۃ حتی یصلی علیہ فلہ قیراط و من شھد حتی یدفن کان لہ قیراطان قیل و ماالقیراطان قال مثل الجبلین العظیمین
  ترجمہ :حضرت ابوہریرہ  رضی اللہ عنہ نے فرمایا رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا جو کوئی نماز جنازہ میں شریک ہویہاں تک کہ وہ اس پر نماز پڑھ لے تو اس کے لئے ایک قیراط اجرہے اور جو تدفین تک موجود رہے اس کے لئے دو قیراط اجرہیں ۔ عرض کیا گیا دو قیراط کیا ہیں ، حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: دو بڑے پہاڑوں کے برابر اجروثواب ۔
( صحیح بخاری شریف ج 1 کتاب الجنائز،باب من انتظرحتی یدفن ، ص 177،حدیث نمبر:1261﴾
اگرتدفین میں دیگرلوگ موجود ہوں اور ایسی صورت میں والدین شرکت سے منع کریں تو والدین کے حکم کی تعمیل کریں البتہ تدفین کرنے والے کوئی اور نہ ہو ںاور والدین شرکت سے منع کریں تواس میں ان کی اطاعت نہ کی جائے بلکہ اُنہیں ادب و احترام کے ساتھ حکم شریعت بتلاکر مطمئن کردیں۔اور تدفین میں شریک ہوجائیں ۔
واللہ اعلم بالصواب –
سیدضیاءالدین عفی عنہ ،
شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ
بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com
حیدرآباد دکن
All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com