***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عقائد کا بیان > نبوت و رسالت کا بیان

Share |
سرخی : f 1123    کیا حضور صلی اللہ علیہ وسلم کا نور ہونا قرآن وحدیث سے ثابت ہے؟
مقام : ہالینڈ,
نام : محمد افضل
سوال:    

ہمارے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے بارے میں کہا جاتاہے کہ آپ نور ہیں ،کیا قرآن و حدیث سے اس کا ثبوت ملتا ہے ؟اس بارے میں اگر کوئی قرآن شریف کی آیت یا کوئی حدیث شریف ہے تو ضرور بیان فرمائیں۔


............................................................................
جواب:    

نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کا نور ہونا قرآن مجید و حدیث شریف سے ثابت ہے ،کتب احادیث، معاجم ومسانیدمیں اس متعلق کئی ایک روایتیں منقول ہیں ،بطور نمونہ یہاں ایک آیت کریمہ اور ایک حدیث پاک نقل کی جاتی ہے ،اللہ سبحانہ وتعالیٰ نے حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کوشان نورانیت کے ساتھ مبعوث فرمایا ،جس کا ذکراپنے مبارک کلام میں فرماتا ہے: قد جاء کم من اللّٰہ نوروکتب مبین۔ ترجمہ:تحقیق کہ تمہارے پاس اللہ تعالیٰ کی جانب سے ایک عظیم نور اور واضح کتاب آچکی۔ (سورۃ المائدہ ۔15( رئیس المفسرین ترجمان القرآن حبر الامۃسیدنا عبد اللہ بن عباس رضی اللہ عنہما اس آیت کریمہ کی تفسیر میں فرماتے ہیں: (قد جاء کم من اللہ نور)رسول یعنی محمداﷺ ترجمہ:نور یعنی حضرت سیدنا محمد صلی اللہ علیہ وسلم۔ دیگر مفسرین کرام نے بھی اس آیت مبارکہ کی تفسیر میں یہی بیان فرمایا ہے کہ ’’نور‘‘ سے مراد حضور پاک صلی اللہ علیہ وسلم کی ذات والا صفات ہے ۔(تفسیر جلالین ،تفسیر بیضاوی ، تفسیر معالم التنزیل ، تفسیر کبیر وغیرہ، سورۃ المائدہ ۔15) ’’نور‘‘ ہو النبی صلی اللّٰہ علیہ وسلم ’’وکتب‘‘ قرآن۔ (تفسیر جلالین ص97( مسند امام احمد، باقی مسند الانصار میں حضرت ابو امامہ رضی اللہ عنہ کی روایت منقول ہے (21231) حدثنا لقمان بن عامرقال سمعت اباامامۃ قال قلت یا نبی اللہ ما کان اول بدء امرک؟قال دعوۃ ابی ابراہیم وبشری عیسی وراَت امی انہ یخرج منہا نور اضاء ت منہا قصور الشام۔ ترجمہ: لقمان بن عامررضی اللہ عنہ کہتے ہیں میں نے حضرت ابو امامہ رضی اللہ عنہ سے سنا وہ فرماتے ہیں میں نے عرض کیا:اے اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم !آپ کا ابتدائی معاملہ کس طرح تھا؟حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا:میں میر ے جدامجد حضرت ابراہیم علیہ السلام کی دعاء اور حضرت عیسیٰ علیہ السلام کی بشارت ہوں اور میری والدہ محترمہ نے دیکھا کہ آپ سے نور نمودار ہواکہ جس سے ملک شام کے محلات روشن ہوگئے۔ یہ روایت مسند احمد کے علاوہ مستدرک علی الصحیحین ،حدیث نمبر:4140۔معجم کبیر طبرانی، حدیث نمبر:7631۔ دلائل النبوۃللبیہقی، حدیث نمبر:17۔خصائص کبری ج1ص46 میں بھی موجود ہے۔ مذکورہ آیت کریمہ ،کتب تفاسیر اور احادیث مبارکہ سے نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی نورانیت ثابت ہوتی ہے ۔ واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com