***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > معاملات > حلال و حرام کا بیان

Share |
سرخی : f 1129    اسمگلنگ کے ذریعہ سامان در آمد کرنا؟
مقام : UAE,
نام : ساجد خاں
سوال:    

مفتی صاحب ! ایک ملک سے دوسرے ملک سفر کرنے والے افراد اسمگلنگ (Smuggling)کے ذریعہ بعض چیزیں ساتھ لاتے ہیں تاکہ کسٹم نہ لگے ، شریعت میں اس کا کیا حکم ہے؟ حالانکہ ان میں سے بعض چیزوں کا استعمال اسلام میں جائز ہوتا ہے ۔


............................................................................
جواب:    

شریعت اسلامیہ نے ہرشخص کو اس بات کا حق دیا ہے کہ وہ جائز اشیاء کی خریدوفروخت کرے اور اپنی ضرورت کے مطابق اُسے منتقل کرے ، فی زمانہ مختلف ممالک اپنی اقتصادی ترقی کو ضرر سے محفوظ رکھنے کے لئے بیرون ملک سے درآمد کی جانے والی اشیاء پر پابندی عائد کرتے ہیں ‘ شرعاً اس کی گنجائش ہے ، صحیح مسلم کی یہ حدیث پاک ہے :عَنِ ابْنِ عُمَرَ أَنَّ رَسُولَ اللَّہِ صلی اللہ علیہ وسلم نَہَی أَنْ تُتَلَقَّی السِّلَعُ حَتَّی تَبْلُغَ الأَسْوَاقَ. ترجمہ : سیدنا عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنھما سے روایت ہے کہ حضرت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے اس عمل سے منع فرمایا کہ سامان کو آگے بڑھ کر حاصل کرلیا جائے یہاں تک کہ وہ بازار پہنچ جائے ۔(صحیح مسلم ، کتاب البیوع ، باب تحریم تلقی الجلب ، حدیث نمبر: 3894) اس سلسلہ میں فقہاء کرام نے وضاحت کی ہے کہ کسی مقام سے درآمد کیا جانے والا سامان اگر معین افراد کے درمیان رہے اور کھلے بازار میں نہ آئے تو قیمتیں گراں ہوں گی اور مقامی باشندوں کو نقصان لاحق ہوگا، اس لئے حضرت نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے اس سے منع فرمایا، اگر اس کی وجہ سے ضرر نہ ہوتو منع نہیں، جیساکہ علامہ ابن نجیم مصری رحمۃ اللہ علیہ نے البحرالرائق شرح کنز الدقائق میں لکھا ہے : ومحمل النھی عندنا اذاکان یضر باھل البلد اولبس اما اذا انتفیا فلاباس بہ ۔ (البحر الرائق شرح کنز الدقائق ، کتاب البیع ، فصل فی احکام البیع الفاسد) لہذا ملکی قوانین کا لحاظ کرتے ہوئے اسمگلنگ (Smuggling)کے ذریعہ کوئی چیز لانے سے اجتناب کرنا چاہئے کیونکہ مسلمان کسی ملک میں رہتا ہے اور اس ملک کا قانون جس حدتک شریعت اسلامیہ کے خلاف نہ ہو اُس حدتک اُس پر عمل کرنے میں حرج نہیں ۔ واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com