***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > معاملات > حلال و حرام کا بیان

Share |
سرخی : f 1160    ائیرہوسٹس کا جاب کرنا کیسا ہے
مقام : حیدرآباد ۔انڈیا,
نام : ایس بشری
سوال:    

کیا مسلم لڑکیاں ائیرہوسٹس کا جاب کرسکتی ہیں- ایس بشری، حیدرآباد


............................................................................
جواب:    

کسی مسلم خاتون کے لئے ائیرہوسٹس کا جاب بہ چند وجوہ درست نہیں- 1) ائیرہوسٹس کے لئےعموما غیرساتر لباس ہوتاہے - 2) بلاتکلف مردوں سے اختلاط اس کے لئے ناگزیر ہوتاہے- 3) ساری ملازمت خود سفر کی حالت میں ہوتی ہے ، جبکہ حضرت نبی اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم نے غیر محرم کے ساتھ سفر کرنے سے منع فرمایا ہے ، جیساکہ صحیح بخاری شریف میں ہے : عَنْ ابْنِ عُمَرَ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُمَا أَنَّ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ لَا تُسَافِرْ الْمَرْأَةُ ثَلَاثَةَ أَيَّامٍ إِلَّا مَعَ ذِي مَحْرَم- ترجمہ:حضرت عبد اللہ ابن عمر رضی اللہ عنہما سے روایت ہے کہ حضرت نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا : کوئی عورت بغیر محرم کے تین دن سے زیادہ کی مسافت کا سفر نہ کرے- (صحیح بخاری، كتاب الجمعة،باب في كم يقصر الصلاة،حدیث نمبر:1024) اگر واقعی طور پر ائیرہوسٹس کے لئے حجاب شرعی کا اہتمام اور اختلاط مرد سے اجتناب کرتے ہوئے اپنے ساتھ محرم کا التزام رکھ کر جاب کرنا ممکن ہوتو احکام شرع کی مکمل رعایت کے ساتھ گنجائش ہے – واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com