***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > اخلاق کا بیان > پڑوسیوں کے حقوق

Share |
سرخی : f 1184    پڑوسی کے شرسے محفوظ رہنے کا طریقہ
مقام : گلبرگہ،انڈیا,
نام : انوری بیگم
سوال:    

مفتی صاحب !میں اعتماد میں آپ کے سوال وجواب کوشوق سے پڑھتی ہو ں ،میراایک سوال یہ ہیکہ پڑوسی کے شرسے محفوظ رہنے کے لئے نمازاوروظیفہ بتلائیے؟خداحافظ


............................................................................
جواب:    

قرآن کریم واحادیث شریفہ میں پڑوسیوں کے ساتھ اچھاسلوک کرنے کی تاکیدکی گئی ہے ،اگر پڑوسی زیادتی کررہاہوتب بھی زیادتی کرنے کی اجازت نہیں ہے بلکہ نرمی وخوش اخلاقی سے معاملہ کرنا چاہئیے۔جیساکہ اللہ رب العزت کا ارشادہے : اِدْفَعْ بِالَّتِیْ ہِیَ اَحْسَنُ فَاِذَاالَّذِیْ بَےْنَکَ وَبَےْنَہٗ عَدَاوَۃٌ کَأنَّہٗ وَلِیٌّ حَمِےْمٌ ۔ ترجمہ :تم برائی کو بہتر طریقہ سے دور کرو تو وہ شخص کہ تمہارے اور اس کے درمیان دشمنی ہو گویا وہ گہرا دوست ہوجائے۔ (حم السجدۃ۔34) ان شاء اللہ خوش اخلاقی وحسن معاملہ کی برکت سے پڑوسی کی شرانگیزی سے بچاجاسکتاہے۔نفل پڑھ کراللہ کی بارگاہ میں دعاء کریں ،درودشریف اورلاحول ولاقوۃ الاباللّٰہ کا وردکرتے رہیں ان شاء اللہ آپ کوان سے کوئی ضررنہیں پہنچے گا۔ واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com