***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > اخلاق کا بیان > آداب

Share |
سرخی : f 1198    ناخن نکالنے کا طریقہ
مقام : حیدرگوڑہ ۔انڈیا,
نام : شیخ ندیم
سوال:     مفتی صاحب ! میں نے بہت سے لوگوں کو الگ الگ طریقوں سے ناخن کاٹتے ہوئے دیکھا ہے ، مجھے اس کا صحیح طریقہ معلوم نہیں ، مہربانی فرماکر ہاتھ ‘پیر کے ناخن کاٹتے وقت شروع کہاں سے کرنا چاہئے اور ختم کس پر کرناچاہئے ؟ اس کا صحیح طریقہ بیان فرمادیں ، میں آپ کا شکرگزار رہوں گا، فقط آپ کا مخلص ۔
............................................................................
جواب:     ناخن تراشنا سنن فطرت میں داخل ہے ، اس کاطریقہ یہ ہے کہ پہلے ہاتھ کے ‘پھر پیر کے ناخن تراشے جائیں ، اس طرح کہ دائیں ہاتھ کی شہادت کی انگلی سے آغاز کریں ، چھوٹی انگلی تک تراشنے کے بعد بائیں ہاتھ کی چھوٹی انگلی سے انگوٹھے تک تراشیں اور دائیں ہاتھ کے انگوٹھے پرختم کریں ، بعد ازاں دائیں پیر کی چھوٹی انگلی سے شروع کرکے بائیں پیر کی چھوٹی انگلی پرختم کریں۔  
فتاوی عالمگیری میں ہے : وینبغی أن یکون ابتداء قص الأظافیر من الید الیمنی وکذا الانتہاء بہا فیبدأ بسبابۃ الید الیمنی ویختم بإبہامہا وفی الرجل یبدأ بخنصر الیمنی ویختم بخنصر الیسری۔(کتاب الکراھیۃ ، الباب التاسع عشر فی الختان والخصاء وقلم الاظفار )
واللہ اعلم بالصواب –
سیدضیاءالدین عفی عنہ ،
شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ ،
بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com
حیدرآباد دکن۔
All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com