***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > نماز کا بیان

Share |
سرخی : f 1199    سترہ سے متعلق ایک مسئلہ
مقام : ممبئی,
نام : میر عاطف
سوال:    

میں تجارت کرتاہوں اور کبھی کبھی دکان میں نماز ادا کرلیتاہوں ، میری دکان میں ایک حصہ اونچا ہے اور دوسرا حصہ نیچے ہے ، قبلہ‘ ایسی جانب ہے کہ سامنے راستہ ہے ، دکان کے اونچے حصہ میں نماز پڑھتے وقت سامنے سے گزرنے والوں کا سر اور کندھے دکھائی دیتے ہیں ، میرا سوال یہ ہے کہ کیا ایسی صورت میں سامنے سے گزرنے والے گنہگار ہوں گے یا نہیں ؟ اور مجھے دکان میں نماز پڑھتے وقت کیا کرنا چاہئیے ؟ کیا مجھے سترہ رکھنا چاہئے ؟


............................................................................
جواب:    

نمازی کے سامنے گزرگاہ ہوتو سترہ رکھنا چاہئے ، اس سے نمازی کو یکسوئی حاصل ہوتی ہے ، اگر نمازی اونچی سطح پر نماز ادا کررہاہو اور گزرنے والے کے بدن کا آدھا یا آدھے سے کم حصہ نمازی کے مقابل آتاہو جیساکہ آپ نے سوال میں ذکر کیا کہ گزرنے والے کا سر اور کندھے دکھائی دیتے ہیں تو ایسی صورت میں سامنے سے گزرنا ‘ ممنوع نہیں اور سترہ کی بھی ضرورت نہیں ۔ ردالمحتار میں سترہ کے مسائل کے تحت مرقوم ہے : ( قولہ بعض أعضاء المار إلخ ) قال فی شرح المنیۃ : لا یخفی أن لیس المراد محاذاۃ أعضاء المار جمیع أعضاء المصلی فإنہ لا یتأتی إلا إذا اتحد مکان المرور ومکان الصلاۃ فی العلو والتسفل بل بعض الأعضاء بعضا۔ ۔ ۔ لو حاذی أقلہا أو نصفہا لم یکرہ۔(ردالمحتار ، کتاب الصلوٰۃ ، فروع مشی المصلی مستقبل القبلۃ ھل تفسد صلوٰتہ ) واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ ، بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن۔

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com