***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > معاملات > قربانی کا بیان > قربانی کے جانور

Share |
سرخی : f 132    قربانی کے جانور وں کی کم ازکم عمر
مقام : سنتوش نگر,india,
نام : محمد عمر،
سوال:    

قربانی کیلئے بیچے جانے والے جانوروں میں کم عمر کے جانور بھی لائے جاتے ہیں ،سوال یہ ہے کہ قربانی کیلئے کتنی عمر والے جانور خرید نے چاہئے،جس طرح دنبہ چھہ ماہ کا ہوتو قربانی ہوجاتی ہے کیا اسی طرح بکرا، گائے یا اونٹ میں بھی کم عمر کے جانور کی قربانی کی جاسکتی ہے؟


............................................................................
جواب:    

قربانی کیلئے کس جانورکی عمر کتنی ہونی چاہئیے اس سے متعلق صحیح مسلم شر یف ج 2ص155 میں حدیث مبارک ہے(حدیث نمبر:1963) عن جابر قال قال رسول الله صلی الله عليه وسلم لاتذبحوا الامسنة الاان يعسرعليکم فتذبحوا جذعة من الضان ۔ ترجمہ: سیدنا جابررضی اللہ عنہ سے روایت ہے انہوں نے فرمایا حضرت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا : صرف مُسِنَّہ یعنی ایک سال کی بکری ، دوسال کی گائے او رپانچ سال کا اونٹ ذبح کرو البتہ تمہیں دشوار ہوتو چھہ ماہ کا دنبہ ذبح کرلو۔ اس حدیث شریف کی روشنی میں محدثین حضرات وفقہاء کرام نے بیان کیا کہ قربانی کیلئے بکرے کی کم ازکم عمر ایک سال ، گائے کی دوسال او راونٹ کی پانچ سال ہے،اس سے کم عمر والے جانور کی قربانی درست نہیں ،چھ ماہ کا دنبہ اگر اتناموٹا او رفربہ ہوکہ ایک سال کے بکر ے کے برابردکھائی دیتاہو تو اس کی قربانی درست ہے ان جانوروں کی عمرمذکورہ عمر سے زیادہ ہوتو بدرجہ اولی جائز بلکہ افضل ہے ،بکرا ایک سال سے کم ، گائے دوسال سے کم اور اونٹ پانچ سال سے کم عمر ہوتوان جانوروں کی قربانی درست نہیں ۔ جیسا کہ فتاوی عالمگیری ج۵کتاب الاضحية الباب الخامس فی بيان محل اقامة الواجب ص ۲۹۷میں ہے (واماسنه) فلا يجوزشیٔ مماذکرنا من الابل والبقروالغنم عن الاضحيةالا الثنی من کل جنس والاالجذع من الضان خاصة اذاکان عظيما واما معاني هذه الاسماء فقدذکر القدوری ان الفقهاء قالوا الجذع من الغنم ابن ستة اشهر والثنی ابن سنة والجذع من البقرابن سنة والثنی منه ابن سنتين والجذع من الابل ابن اربع سنين والثنی ابن خمس وتقدير هذه الاسنان بما قلنا يمنع النقصان ولايمنع الزيادة ۔ ۔ ۔ ولو ضحی باکثرمن ذلک شيا يجوزويکون افضل ۔ واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن۔

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com