***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > معاملات > ذبح کا بیان > حلال اور حرام جانور

Share |
سرخی : f 1378    مادہ جانور میں انجکشن کے ذریعہ مادئہ منویہ پہنچانا!
مقام : ہنمکنڈہ،انڈیا,
نام : محمد ابریز
سوال:    

ڈائر ی فارمس میں بھینس کے حمل کے لئے انجکشن دیا جارہا ہے جس میں نر کا مادئہ منویہ ہوتا ہے ،کیا جانور کی نسل بڑھانے کے لئے یہ طریقہ اختیار کرنا درست ہے؟ اس طریقہ سے بھینس گابھن ہوجائے تو کیا پیدا ہونے والے جانور کادودھ او رگوشت جائز ہے؟


............................................................................
جواب:    

جانور وں میں عصمت کا مسئلہ تو نہیں اور نہ ان کے لئے نسب کے احکام ہیں‘ بنابریں نسل کی افزائش کے لئے انجکشن کے ذریعہ مادۂ منویہ پہنچانا جائز ہے، انجکشن کے ذریعہ مادہ پہنچایا جائے‘ اس کی وجہ سے حمل قرار پائے اور جانور بچہ جنم دے تو اس بچہ کا گوشت حلال ہے، اگر وہ دودھ دینے لگے تو دودھ بھی حلال ہے۔ لہذا ڈائری فارمس میں استقرارِ حمل کے لئے بھینس کو انجکشن دینا شرعاً درست ہے اور اس سے پیدا ہونے والے بچہ کاگوشت اور دودھ جائز ہے۔ واللہ اعلم بالصواب سیدضیاء الدین نقشبندی عفی عنہ شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی ابوالحسنات اسلامک ریسرچ سنٹرwww.ziaislamic.com حیدرآباد،دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com