***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > طہارت کا بیان > غسل کے مسائل

Share |
سرخی : f 1406    کیا پسینہ نکلنے  کی وجہ سے وضو ٹوٹ جاتا ہے ؟
مقام : انڈیا,
نام : سید جعفر محی الدین حسینی
سوال:    

السلام علیکم حضرت مفتی صاحب مسئلہ یہ ہیکہ میں جاب کے سلسلہ میں سفر بہت کرتاہوں ،بسااوقات بس میں زیادہ پبلک رہنے سے انڈرویر کا حصہ گیلا ہوجاتا ہے ،تو کیا مجھکو غسل یا وضوکرنا پڑیگا؟


............................................................................
جواب:    

وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ! جواب:پسینہ پاک ہے، اگر پسینہ کی وجہ سے کپڑے گیلے ہوجائیں تو اس کی وجہ سے وضو یا غسل کی ضرورت نہيں اس کےبرخلاف شرمگاہ سے منی کے علاوہ کوئی اور مادہ نکلے تو یہ ناقض وضو ہے ،اس کی وجہ سے وضو کرلینا کافی ہے غسل کرنے کی ضرورت نہیں ہے- جیساکہ فتاوی عالمگیری ج1 ، ص 9 / 10 ، میں ہے : الْفَصْلُ الْخَامِسِ فِي نَوَاقِضِ الْوُضُوءِ : مِنْهَا مَا يَخْرُجُ مِنْ السَّبِيلَيْنِ مِنْ الْبَوْلِ ۔۔۔۔۔۔ وَالْوَدْيِ ۔۔۔ وَالْوَدْيُ بَوْلٌ غَلِيظٌ وَقِيلَ مَاءٌ يَخْرُجُ بَعْدَ الِاغْتِسَالِ مِنْ الْجِمَاعِ وَبَعْدَ الْبَوْلِ .كَذَا فِي التَّبْيِينِ . واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ ، بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن۔

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com