***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > معاشرت > نکاح کا بیان > رضاعت کے مسائل

Share |
سرخی : f 1446    ناپاکی کی حالت میں دودھ پلانا
مقام : کریم نگر,
نام : شائستہ فاطمہ
سوال:     میں نے پڑھا کہ عورت ماہواری میں ہوتی ہے تو اس کے احکام الگ ہیں ، وہ نمازیں نہیں پڑھتی ، قرآن شریف نہیں چھوتی ، میں یہ جاننا چاہتی ہوں کہ کیا عورت ناپاکی کی حالت میں بچہ کو دودھ پلاسکتی ہے یا نہیں؟
............................................................................
جواب:     عورت کے لئے ناپاکی کی حالت میں بچہ کو دودھ پلا نے سے متعلق قرآن کریم وحدیث شریف اور فقہی کتابوں میں کوئی ممانعت منقول نہیں اور ناپاکی دودھ پر اثرانداز نہیں ہوتی اس لئے اس حالت میں بچہ کو دودھ پلانا ازروئے شرع جائز ہے‘ اگرعام جنابت کی حالت ہو تو جلد از جلد غسل کرلینا چاہئے، ماہواری و نفاس وغیرہ کی حالت ہوتوایسی حالت میں دودھ پلانے میں مطلقًا کوئی حرج نہیں۔ واللہ اعلم بالصواب سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ ، بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن۔
All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com