***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > حج وعمره کا بیان

Share |
سرخی : f 1459    حج کمیٹی سے انتخاب نہ ہونے پر تاخیرحج
مقام : علی باغ,
نام : خلیل احمد
سوال:    

میں دوسال سے حج کمیٹی میں درخواست دے رہاہوں، لیکن قرعہ میں نام نہیں آیا، میرے جاننے والوں میں کچھ ایسے ہیں کہ اُن کا تیسرا سال ہے ‘ پھر بھی نام نہیں آیا اور کچھ ایسے بھی ہیں کہ پہلی مرتبہ میں نام آگیا، کیا یہ صحیح ہے ؟ میں نے حج کے لئے رقم اُٹھارکھی ، جانے کا مکمل ارادہ ہے ، نام نہ آنے کی وجہ سے تاخیر ہورہی ہے ، کیا اس وجہ سے میں گنہگار ہوں ؟ برائے مہربانی جواب دیں نوازش ہوگی۔


............................................................................
جواب:    

چونکہ آپ حج ہی کے ارادہ سے حج کمیٹی سے حج اداکرنے کی کوشش کررہے ہیں تو قرعہ اندازی میں نام نہ نکلنے کی وجہ سے یہ تاخیرگناہ نہیں قرار پائے گی ، تین سال قرعہ میں نام نہ نکلے تو چوتھے سال بغیرقرعہ اندازی کے حج کمیٹی آپ کو ترجیحی طورپر منتخب کرلیتی ہے ، لہذا آئندہ سال آپ حج کرلے سکتے ہیں ۔ البتہ خانگی ٹراویلس کے ذریعہ حج کے اخراجات کے آپ متحمل ہوں اور اب ویزہ مل سکتا ہو تو خانگی ٹراویلس سے حج کرلیں۔ واللہ اعلم بالصواب سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن۔

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com