***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > حج وعمره کا بیان > طواف کے مسائل

Share |
سرخی : f 1467    دوگانۂ طوا ف مقام ابراہیم کے بعد کس جگہ اداکرنا افضل ہے ؟
مقام : رائچور،کرناٹک انڈیا,
نام : صدیق حسن
سوال:    

کعبۃ اللہ شریف کا طواف کرنے کے بعد حاجی صاحبان جب مقام ابراہیم کے پاس طواف کے دو رکعات پڑھنے کے لئے جاتے ہیں تو بہت کم اوقات ایسا ہوتا ہے کہ مقام ابراہیم کے پاس نماز ادا کرنے کےلئے جگہ ملتی ہو ورنہ اکثر موقع نہیں ملتا، اس وقت حاجی صاحبان کوکیا کرنا چاہئیے ؟ جب وہ مقام ابراہیم کے پاس نماز ادانہیں کرپاتے تو طواف کے دو رکعات کس جگہ پڑھنے میں فضیلت ہے؟


............................................................................
جواب:    

دوگانۂ طواف واجب ہے، مستحب وافضل یہ ہےکہ دوگانہ طواف مقام ابراہیم کے پیچھے اداکی جائے، فقہائے کرام نے دوگانہ طواف کی ادائیگی کے لئے فضیلت کے اعتبار سے ترتیب وار مقامات ذیل کی صراحت فرمائی ہے : طواف کے دو رکعات(1)مقام ابراہیم کے پیچھے اداکرنا افضل ہے (2)اسکے بعد کعبہ شریف کے اندرپڑھنے میں فضیلت ہے (3)پھر حطیم کعبہ میں میزابِ رحمت کے نیچے (4) پھر اسکے قریبی حصہ میں (5) پھر باقی حطیم میں (6) پھر کعبہ مقدسہ کے قریب (7) پھر مسجد حرام میں جہاں ہوسکے(8) پھرحرم شریف میں جہاں موقع میسر آئے۔ لہذا مقام ابراہیم کے پیچھے دوگانۂ طواف پڑھنے کی گنجائش نہ ہوتو مذکورہ بالا ترتیب وار مقامات میں سے کسی مقام پر حسبِ سہولت وگنجائش واجب الطواف ادا کرلی جاسکتی ہے ۔ جیسا کہ ردالمحتار، ج 2،کتاب الحج ،فصل فی الاحرام وصفۃ المفرد بالحج ، مطلب فی طواف القدوم ، ص 185،میں ہے :ویستحب مؤکدا اداؤھا خلف المقام ثم فی الکعبۃ ثم فی الحجر تحت المیزاب ثم کل ماقرب من الحجر ثم باقی الحجرثم ماقرب من البیت ثم المسجد ثم الحرم ثم لافضیلۃ بعد الحرم بل الاساء ۃ اھ ۔ واللہ اعلم بالصواب – سید ضیاء الدین عفی عنہ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹرwww.ziaislamic.com حیدرآباد،دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com