***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عقائد کا بیان > فرشتوں کا بیان

Share |
سرخی : f 154    قرآن کریم میں  فرشتوں کا ذکر
مقام : برازیل,
نام : انا کلاؤڈیہ
سوال:    

کیا مقدس کتاب قرآن کریم فرشتوں پر یقین رکھتی ہے؟


............................................................................
جواب:    

فرشتوں پر ایمان لانے کا ذکر قرآن کریم میں آیا ہے‘ ارشاد الٰہی ہے: کُلٌّ آمَنَ بِاللّہِ وَمَلآئِکَتِہِ وَکُتُبِہِ وَرُسُلِہِ۔ ترجمہ: سب اللہ پر‘ اس کے فرشتوں‘ اس کی کتابوں اور اس کے رسولوں پر ایمان لائے۔ (سورۃ البقرۃ: 285) نیز ارشاد الٰہی ہے : وَلَکِنَّ الْبِرَّ مَنْ آمَنَ بِاللّہِ وَالْیَوْمِ الآخِرِ وَالْمَلآئِکَۃِ وَالْکِتَابِ وَالنَّبِیِّیْنَ۔ ترجمہ: لیکن نیک وہ شخص ہے جو اللہ پر‘ روز قیامت پر‘ فرشتوں پر‘ کتاب (قرآن) پر اور انبیاء پر ایمان لائے۔ (سورۃ البقرۃ :177) اس کے علاوہ بہت ساری آیات قرآنیہ و احادیث شریفہ مبارکہ ہیں جن سے معلوم ہوتا ہے کہ فرشتے اللہ تعالیٰ کی ایک مخلوق ہیں اور ان پر ایمان لانا اوران کے وجود کو ماننا ضروری ہے۔ واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com