***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > نماز کا بیان > جنازہ کے مسائل

Share |
سرخی : f 1554    عورت کے جنازہ کو اجنبی آدمی کا کندھا دینا کیسا ہے؟
مقام : ناگور ،انڈیا,
نام : سالم
سوال:    

حال ہی میں میری خالہ کا انتقال ہوا ، میں جنازہ کے ساتھ چل رہا تھا تو ایک صاحب نے کسی آدمی سے کہا کہ آپ جنازہ کو کندھا نہیں دے سکتے ، تو انہوں نے پوچھا کیوں ؟ تو انہوں نے جواب دیا کہ آپ میت کے لئے اجنبی ہے ، خاتون کو صرف محرم حضرات یا قریبی رشتہ دار ہی کندھا دے سکتے ہیں ، میرا سوال یہ ہے کہ کیا حقیقت میں خاتون کو رشتہ دار ہی کندھا دیں یا نامحرم اجنبی حضرات بھی کندھا دے سکتے ہیں ؟


............................................................................
جواب:    

خاتون کے جنازہ کو غیرمحرم افراد بھی کندھا دے سکتے ہیں ، اس لئے کہ کندھا دینے کی صورت میں خاتون کے جسم کو ہاتھ مس نہیں ہوتا۔

واللہ اعلم بالصواب

سیدضیاءالدین عفی عنہ

شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ

بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔

حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com