***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > نماز کا بیان > نماز کی سنتیں اور مستحبات

Share |
سرخی : f 158    رفع یدین سے متعلق ایک مسئلہ
مقام : پونا،مہاراشٹرا انڈیا,
نام : عارف اشرفی
سوال:    

رفع یدین کو منسوخ ماننے کے بعد اس پر عمل کرنے والے کی نماز فاسد ہوگی یا نہ ہوگی؟


............................................................................
جواب:    

رفع یدین فقہ حنفی کے مطابق منسوخ ہے اور رفع یدین نہ کرنا سنت ہے‘ صحیح مسلم شریف کی روایت ہے،حضور اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم نے ارشاد فرمایا : اسکنوا فی الصلوٰۃ- نماز میں پرسکون رہا کرو۔ اس کے باوجود اگر کوئی شخص رفع یدین کرے تو یہ خلاف سنت عمل ہے لیکن اس کی وجہ سے نماز فاسد نہیں ہوتی۔ در مختار ج1 ‘ واجبات الصلوٰۃ میں ہے : (رفع الیدین للتحریمۃ) فی الخلاصۃ ان اعتاد ترکہ اثم۔ اور ردالمحتار ج 1‘ واجبات الصلوٰۃمیں ہے: والمختار ان اعتادہ اثم لا ان کان احیانا اھ ....... و ھذا مطرد فی جمیع السنن المؤکدۃ اھ۔ واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com