***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > اخلاق کا بیان > آداب

Share |
سرخی : f 259    کھانے سے پہلے اور بعد نمک چکھنا
مقام : فیض آباد،انڈیا,
نام : محمد اشرف
سوال:    

کھانے سے پہلے اور کھانے نے بعد بعض لوگ نمک چکھتے ہیں اور کہتے ہیں اس وقت نمک چکھنے سے فائدے ہیں، کیا یہ صحیح ہے، کھانے سے پہلے او رکھانے کے بعد نمک چکھنا اسلام میں کیا حیثیت رکھتا ہے؟


............................................................................
جواب:    

کھانا تناول کرنے سے پہلے او رتناول کرنے کے بعد نمک چکھنا مسنو ن ہے ،ایک مسلمان کے لئے سب سے بڑا فائدہ ہے یہ کہ اس سے سنت پر عمل آوری ہوتی ہے چنانچہ البحرالرائق ج 9کتاب الکراہیۃ، فصل فی الاکل والشرب ص337میں ہے ومن السنۃ ان یبدابالملح ویختم بالملح ترجمہ: سنت یہ ہے کہ کھاتے وقت نمک سے شروع کرے اور نمک پر ختم کرے ۔علاوہ ازیں اس کے طبی فوائد بھی ہیں نمک کے اندر بھوک پید اکرنے والے اجزاء ہوتے ہیں جب آدمی نمک چکھتا ہے تو لعاب پیدا کرنے والے غدود بالفور ہاضم غذا رطوبت مہیا کرتے ہیں، اس کی وجہ سے غذالذیذ معلوم ہوتی ہے، نعمت خداوندی کی قدر دانی ہوتی ہے اور غذاہضم ہونے میں سہولت ہوتی ہیں اسی طرح کھانے کے بعد نمک چکھنے کی وجہ سے جمی ہوئی روغنیات ختم ہوجاتی ہیں ۔ واللہ اعلم بالصواب سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ حیدرآباد دکن۔

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com