***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > حج وعمره کا بیان > مدینۂ طیبہ اور مسجد نبوی

Share |
سرخی : f 295    اُحد جنتی پہاڑ ہے
مقام : وجے واڑہ,
نام : محمد عدیل احمد
سوال:     حضرت مفتی صاحب میںنے ایک صاحب کو یہ کہتے سنا کہ احد جنتی پہاڑ ہے،میں یہ جاننا چاہتا ہوں کہ یہ بات کس حد تک درست ہے،کیا کسی روایت سے ثابت ہے؟ براہ کرم رہنمائی فرمائیں-
............................................................................
جواب:     جبل احد یہ وہ مقدس پہاڑ ہے جس کے متعلق حضور اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم نے ارشاد فرمایا :اُحد،یہ ایک شان والا پہاڑ ہے ،جو ہم سے محبت کرتا ہے اور ہم بھی اس سے محبت کرتے ہیں-صحیح بخاری شریف میں حدیث مبارک ہے:   عَنْ أَنَسِ بْنِ مَالِکٍ  رضی اللہ عنہ  أَنَّ رَسُولَ اللَّہِ صلی اللہ علیہ وسلم  طَلَعَ لَہُ أُحُدٌ فَقَالَ : ہَذَا جَبَلٌ یُحِبُّنَا وَنُحِبُّہُ-  
( صحیح بخاری شریف،کتاب المغازی، باب أحد یحبنا  ونحبہ . حدیث نمبر:4084)
آپ نے سوال میں احد شریف کی فضیلت سے متعلق جو سوال کیا ہے اس کا ذکر احادیث کریمہ میں موجود ہے کہ احد ایک جنتی پہاڑ ہے،جیساکہ معجم کبیر طبرانی میں حدیث مبارک ہے:   حَدَّثَنِی کَثِیرُ بن عَبْدِ اللَّہِ الْمُزَنِیُّ، عَنْ أَبِیہِ، عَنْ جَدِّہِ، قَالَ: قَالَ رَسُولُ اللَّہِ صَلَّی اللَّہُ عَلَیْہِ وَسَلَّمَ:أَرْبَعَۃُ أَجْبَالٍ مِنْ أَجْبَالِ الْجَنَّۃِ،۔۔۔ قِیلَ: فَمَا الأَجْبَالُ؟ قَالَ:أُحُدٌ یُحِبُّنَا وَنُحِبُّہُ، جَبَلٌ مِنْ جِبَالِ الْجَنَّۃِ، وَالطُّورُ جَبَلٌ مِنْ جِبَالِ الْجَنَّۃِ، وَلِبْنَانُ جَبَلٌ مِنْ جِبَالِ الْجَنَّۃِ- جامع الاحادیث والمراسیل، الجامع الکبیر للسیوطی اور کنز العمال میں حدیث مبارک ہے:   أربعۃُ أجبلٍ من جبالِ الجنۃِ أحدٌ ونَجَبَۃ وطورٌ ولبنانُ-
ترجمہ:سیدنا عبد اللہ مزنی رضی اللہ تعالی عنہ اپنے والد سے اوروہ آپ کے دادا سے روایت کرتے ہیں انہوں نے فرمایا کہ حضرت رسول اللہ صلی اللہ علیہ والہ وسلم نے ارشاد فرمایا:چار پہاڑ جنتی ہیں،عرض کیا گیا وہ کونسے ہیں؟ حضور اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم نے ارشاد فرمایا
(1)"احد" جنت کے پہاڑوں میں سے ایک پہاڑ ہے ،وہ ہم سے محبت کرتا ہے اور ہم اس سے محبت کرتے ہیں۔
(2) "طور"جنت کے پہاڑوں میں سے ایک پہاڑ ہے۔
(3) "لبنان" جنت کے پہاڑوں میں سے ایک پہاڑ ہے ۔اور
(4)"نَجَبَۃ" جنت کے پہاڑوں میں سے ایک پہاڑ ہے-
( معجم کبیر طبرانی، حدیث نمبر.13496:جامع الاحادیث والراسیل، حرف الہمزۃ، الہمزۃ مع الراء ، حدیث نمبر.3101:الجامع الکبیر للسیوطی، حرف الہمزۃ،ج1، حدیث نمبر.3397:کنز العمال ،فضل الحرمین والمسجد الأقصی، حدیث نمبر 35121:)
واللہ اعلم بالصواب –
سیدضیاءالدین عفی عنہ ،
نائب شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ
بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔
حیدرآباد دکن
All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com