***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عقائد کا بیان > تقدیر پر ایمان لانے کا بی

Share |
سرخی : f 431    چہارشنبہ تخلیق نور کا دن
مقام : UK,
نام : حمید الدین
سوال:    

میں ایک بزنس شروع کرنے کا پروگرام بنایا ہوں جو تاریخ سہولت سے قرار پائی ہے وہ چہارشنبہ کا دن ہے ‘ میرے بعض احباب نے کہا کہ اس دن کے علاوہ کوئی اور دن پروگرام رکھنے کا مشورہ دیا ہے‘ چہارشنبہ کے دن کے متعلق ہمیں اسلام نے کیا نظریہ دیا ہے؟ کیا یہ دن منحوس ہوتا ہے؟ اس دن کوئی بڑاکام نہیں کرنا چاہئے یہ بات کس حدتک درست ہے؟


............................................................................
جواب:    

یہ حقیقت ہے کہ ایک دن دوسرے دن پر فضیلت وبرتری رکھتا ہے، ایک وقت دوسرے وقت کی بہ نسبت زیادہ برکت ورحمت والا ہوتا ہے، لیکن فی نفسہ کسی وقت یا دن میں نحوست کا تصور غیراسلامی نظریہ ہے، جہاں تک چہارشنبہ کی بات ہے توصحیح حدیث پاک میں اس کی فضیلت آئی ہے صحیح مسلم شریف کتاب صفۃالمنافقین واحکامہم باب صفۃ القیامۃ والجنۃ والنارج2 ص371میں سیدنا ابوہریرۃرضی اللہ عنہ سے تفصیلی روایت مذکورہے روایت کا ایک حصہ ملاحظہ ہو:(حدیث نمبر:2879) عن ابی ھریرۃ ۔ ۔ ۔ فقال۔ ۔ ۔ وخلق النور یوم الاربعاء ۔ ترجمہ:حضورصلی اللہ علیہ واٰلہ وسلم نے ارشادفرمایا ۔ ۔ ۔ اور اللہ تعالی نے نور کو چہارشنبہ کے دن پیدا فرمایا۔ مذکورہ حدیث پاک سے معلوم ہوا کہ چہارشنبہ وہ مبارک ومقدس دن ہے جس میں نور کی پیدائش ہوئی لہذا یہ تصورغیر درست ہے کہ اس میں کوئی بڑااور اہم کام نہیں کرنا چاہئے، اس دن کوئی بھی جائزخوشی والا کام انجام دیناان شاء اللہ تعالی بابرکت ہی ہوگا۔ امام سخاوی نے مقاصد حسنہ میں برہان الاسلام کی ’’تعلیم المتعلم‘‘ کے حوالہ سے ذکر کیا کہ وہ اپنے استاذ گرامی صاحب ہدایہ علامہ مرغینانی رحمۃ اللہ علیہ کا طریقہ بیان کرتے ہیں کہ آپ چہارشنبہ کے دن سبق کے آغاز کا اہتمام کیاکرتے اور اس سلسلہ میں یہ حدیث پاک روایت فرمایاکرتے کہ حضرت نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشادفرمایا: چہارشنبہ کے دن جس چیز کابھی آغاز کیا جائے وہ پایۂ تکمیل کو پہنچتی ہے۔ ذکر برہان الإسلام فی کتابہ ( تعلیم المتعلم ) عن شیخہ المرغینانی صاحب الہدایۃ فی فقہ الحنفیۃ أنہ کان یوقف بدایۃ السبق علی یوم الأربعاء وکان یروی فی ذلک بحفظہ ویقول قال رسول اللہ ( ما من شیء بدء بہ یوم الأربعاء إلا وقد تم)۔ (المقاصد الحسنۃ ،حرف المیم) اسی وجہ سے عالم اسلام کی شہرۂ آفاق اسلامی یونیورسٹی جامعہ نظامیہ میں چہارشنبہ کے دن دروس کے آغاز کا اہتمام کیا جاتا ہے۔ تفسیر روح البیان میں سورۃ التوبۃ آیت نمبر37 کے تحت مذکور ہے: وانما الزمان کلہ خلق اللہ تعالی وفیہ تقع اعمال بنی آدم فکل زمان اشتغل فیہ المؤمن بطاعۃ اللہ فہو زمان مبارک وکل زمان اشتغل فیہ بمعصیۃ اللہ فہو مشؤم علیہ فالشؤم فی الحقیقۃ ہو المعصیۃ۔ ترجمہ: ہر وہ لمحہ جس میں بندہ مومن اطاعت الہی میں مصروف رہا ہے وہ اس کے حق میں مبارک ومسعود ہے اور ہر وہ لمحہ جس میں وہ اللہ تعالی کی نافرمانی میں مشغول رہا ہے وہ اس کے حق میں بے برکت ہے‘ دراصل نحوست وبے برکتی گناہ میں ہے۔ واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com