***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عقائد کا بیان > نبوت و رسالت کا بیان

Share |
سرخی : f 478    شب میلاد تارے قریب آگئے
مقام : کلکتہ,
نام : پرویز خان
سوال:    

حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم کی ولادت کی رات بہت سارے ایسے واقعات ہوئے ہیں جو عام طور پر نہیں ہوتے، ایسا ہی میں نے سنا کہ اس رات تارے زمین کے قریب ہوگئے تھے، کیا یہ بات صحیح ہے؟


............................................................................
جواب:    

حضرت نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی ولادت باسعادت کی رات بہت سارے عجائب وقوع پذیر ہوئے، کئی ایک غیر معمولی واقعات رونما ہوئے، جن کا ذکر کتب حدیث شریف، کتب سیرت اور کتب تاریخ میں تفصیلی طور پر ملتا ہے، منجملہ ان عجائب کے یہ ہے کہ تارے کرہٴ ارض کے غایت درجہ قریب ہوچکے تھے۔ جیسا کہ علامہ محمد بن یوسف صالحی نے سبل الھدی والرشاد میں حضرت عثمان بن ابوالعاص رضی اللہ عنہ کی والدہ حضرت فاطمہ بنت عبداللہ رضی اللہ عنہا کا بیان نقل کیا ہے: وعن عثمان بن أبی العاص رضی اللہ تعالی عنہ قال: حدثتنی أمی أنہا شہدت ولادۃ آمنۃ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم لیلۃ ولدتہ قالت: فما شیٔ أنظر إلیہ من البیت إلا نورا وإنی لأنظر إلی النجوم تدنو حتی إنی لأقول: لیقعن علی، فلما وضعتہ خرج منہا نور أضاء لہ الدار والبیت حتی جعلت لا أری إلا نورا. ترجمہ: حضرت عثمان بن ابوالعاص رضی اللہ عنہ نے فرمایا: مجھے میری والدہ نے بیان کیا کہ وہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی ولادت شریفہ کے موقع پر حضرت آمنہ رضی اللہ عنہا کی خدمت میں حاضر خدمت تھیں، فرماتی ہیں: میں نے گھر کی ہر چیز کو روشن و منور دیکھا اور یہ حقیقت ہے کہ تاروں کو قریب ہوتے دیکھی، یہاں تک کہ میں کہنے لگی: یہ ضرور مجھ پر گرجائیں گے، جب حضور صلی اللہ علیہ وسلم حضرت آمنہ رضی اللہ عنہا کے بطن مبارک سے تشریف لائے تو آمنہ رضی اللہ عنہا سے ایسا نور نکلا کہ جس کی وجہ سے سارا گھر روشن و منور ہوگیا، یہاں تک کہ میں نور ہی نور دیکھنے لگی- علامہ ابن کثیر نے سیرت نبویہ میں، امام سیوطی نے خصائص کبری میں، امام بیہقی نے دلائل النبوۃ میں ذکر کیا ہے- (سبل الھدی والرشاد، ج 1، جماع ابواب مولدہ الشریف صلی اللہ علیہ وسلم، الباب السادس فی وضعہ صلی اللہ علیہ وسلم، ص 341۔السیرۃ النبویۃ لابن کثیر، باب مولد رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم، الخصائص الکبری، باب ما ظھر فی لیلۃ مولدہ من المعجزات والخصائص، دلائل النبوۃ للبیھقی، جماع ابواب مولد النبی صلی اللہ علیہ وسلم- الاستیعاب فی معرفۃ الاصحاب، فاطمہ بنت عبداللہ، تاریخ طبری، تاریخ دمشق، باب ذکر مولد النبی علیہ الصلوۃ والسلام) واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com