***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > اخلاق کا بیان > آداب

Share |
سرخی : f 481    نام مبارک کا مخفف MOHDلکنے کا حکم  
مقام : جدہ,
نام : محمد ذکی الدین صدیقی نقشبندی‘
سوال:    

اب تک میں میرا نام محمد ذکی میں MOHD شارٹ میں لکھا کرتا تھا‘ جگہ کم ہونے کی وجہ سے‘ ایک صاحب نے کہا کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم کا نام پورا لکھنا چاہئے یا پھر نہ لکھیں ‘ شارٹ فارم (Short Form) میں لکھنا بے ادبی ہے‘ براہ مہربانی جواب عنایت فرمائیں


............................................................................
جواب:    

عام طورپر مختلف ناموں کے شروع میں حضور صلی اللہ علیہ وسلم اللہ علیہ وسلم کے نام مبارک سے برکت حاصل کرتے ہوئے جو لفظ محمد لکھاجاتاہے اس کو مکمل ہی لکھنا چاہئے ،اس میں اختصار کرناحسن ادب کے خلاف ہے ۔کیونکہ اختصار کرنے میں اصل نام مبارک کا مفہوم ادانہیں ہوسکتا۔ لہذا شارٹ فارم (Short Form) میں MOHD نہ لکھیں ،جب بھی لکھیں مکمل نام لکھیں ۔ البتہ پاسپورٹ ،اقامہ وغیرہ دستاویزات میں غلطی یا لاعلمی کی بنیاد پر اس طرح سے اختصار کے ساتھ لکھا جاچکاہے اور اس کو تبدیل کرنے میں مجبوری ہو تو عذر کی وجہ سے انشاء اللہ خلاف ادب نہیں ہوگا۔علاوہ ازیں دیگر دستاویزی کاغذات میں مکمل نام لکھنے کا اہتمام کریں ۔ واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com