***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > اخلاق کا بیان > متفرقات

Share |
سرخی : f 554    انتقال کے بعد گھر کو چونا ڈالنا
مقام : ورنگل، انڈیا,
نام : محمد حمید اللہ
سوال:    

میری والدہ کا انتقال ہوئے دو مہینے ہوئے ہیں اور میں نے نیا گھر بنوایا ہے‘ لوگ مجھے کہتے ہیں کہ اس گھر کو ایک سال تک چونا نہیں ڈالنا چاہئیے‘ کیا یہ بات درست ہے؟


............................................................................
جواب:    

دین اسلام صفائی و طہارت کا حکم دیتا ہے‘ اگر آپ ضرورت محسوس کرتے ہیں کہ گھر کو چونا ڈالا جائے تو آہک پاشی کروانے میں شرعاً کوئی مضائقہ نہیں‘ لوگوں کا اس طرح منع کرنا درست نہیں۔ واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com