***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > معاملات > جنایات کا بیان

Share |
سرخی : f 573    غیرمسلم کاقتل حرام ہے
مقام : ناگپور،انڈیا,
نام : مزمل احمد
سوال:     میں نے ایک حدیث سنی کہ جس شخص نے غیر مسلم کو قتل کیا وہ جنت کی خوشبو نہیں سونگھے گا، کیا ایسی کوئی حدیث ہے ؟ برائے مہربانی حوالہ کے ساتھ بیان کریں۔
............................................................................
جواب:     جی ہاں آپ نے جو روایت سنی بے شک وہ صحیح حدیث شریف ہے جس کو امام بخاری نے اپنی صحیح کتاب الجزیۃ،باب اثم من قتل معاہدا بغیر جرم میں تخریج کیا ‘اگر کوئی مسلمان‘ کسی غیرمسلم کو ناحق قتل کردے تواس کیلئے حضرت نبی اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم نے شدید وعید بیان فرمائی ہے‘ صحیح بخاری شریف میں ہے : عن عبد اللہ بن عمرو رضی اللہ عنہما عن النبی صلی اللہ علیہ وسلم  قال من قتل معاہدا لم یرح رائحۃ الجنۃ وان ریحہا توجد من مسیرۃ اربعین عاما۔
ترجمہ: حضرت عبد اللہ بن عمرو رضی اللہ عنہما حضرت نبی اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم سے روایت کرتے ہیں کہ آپ نے ارشاد فرمایا: جوشخص معاہدہ والے کسی غیر مسلم کو قتل کرے تو وہ جنت کی خوشبو نہیں سونگھے گا، حالانکہ اسکی خوشبوچالیس سال کی مسافت سے سونگھی جاتی ہے۔
﴿صحیح بخاری شریف، کتاب الجزیۃ،باب اثم من قتل معاہدا بغیر جرم، حدیث نمبر2930﴾
سنن ابوداؤد شریف کتاب الخراج والامارۃ والفیء، میں حدیث پاک ہے : الا من ظلم معاہدا اوانتقصہ اوکلفہ فوق طاقتہ اواخذ منہ شیئا بغیر طیب نفس فانا حجیجہ یوم القیمۃ۔
ترجمہ: خبردار ! جس شخص نے کسی صاحب معاہدہ پر ظلم کیا یا اس کا حق چھین لیا یا اسے اس کی طاقت سے زیادہ ذمہ داری دی یا اسکی خوشدلی کے بغیر اس سے کوئی چیزلے لی تو میں قیامت کے دن اس غیر مسلم کی جانب سے اس زیادتی کرنے والے کے خلاف مقدمہ پیش کروگا۔
﴿سنن ابوداؤد شریف ‘ کتاب الخراج والامارۃ والفیء، حدیث نمبر2654﴾
واللہ اعلم بالصواب –
سیدضیاءالدین عفی عنہ ،
نائب شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ
بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com
حیدرآباد دکن
07-05-2010
All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com