***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عقائد کا بیان > نبوت و رسالت کا بیان

Share |
سرخی : f 611    حضرت موسیٰ علیہ السلام اور دیدار الٰہی
مقام : سعودی عرب,
نام : حضیر
سوال:    

کیا موسی علیہ السلام نے اللہ تعالی کا دیدار کیا ہے؟


............................................................................
جواب:    

دنیا میں ظاہری آنکھوں سے رب تعالی کا دیدار کرنا، یہ حضور اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی خصوصیت ہے- حضرت موسی علیہ السلام نے ظاہری طور پر اللہ تعالی کا دیدار نہیں کیا بلکہ اللہ تعالی کی تجلی خاص کا مشاہدہ کیا،جیساکہ سورۃ الاعراف میں ارشاد باری تعالی ہے: وَلَمَّا جَآءَ مُوۡسٰی لِمِيقَاتِنَا وَکَلَّمَهٗ رَبُّهٗ ۙ قَالَ رَبِّ اَرِنِیۡۤ اَنۡظُرْ اِلَيکَ قَالَ لَنۡ تَرٰينِیۡ وَلٰکِنِ انۡظُرْ اِلَی الْجَبَلِ فَاِنِ اسْتَقَرَّ مَکَانَهٗ فَسَوْفَ تَرٰينِیۡ ۚ فَلَمَّا تَجَلّٰی رَبُّهٗ لِلْجَبَلِ جَعَلَهٗ دَكًّا وَّ خَرَّ مُوۡسٰی صَعِقًا ۚ فَلَمَّاۤ اَفَاقَ قَالَ سُبْحٰنَکَ تُبْتُ اِلَيکَ وَ اَنَا اَوَّلُ الْمُؤْمِنِينَ- ترجمہ: اور جب موسی علیہ السلام ہمارے مقرر کردہ وقت پر حاضر ہوئے اور ان کے رب نے ان سے کلام فرمایا، انہوں نے عرض کیا: اے میرے رب! مجھے اپنا جلوہ دکھا کہ میں تیرا دیدار کرلوں، ارشاد فرمایا: تم مجھے ہرگز نہیں دیکھ سکتے، مگر پہاڑ کی طرف دیکھو اگر وہ اپنی جگہ ٹھہرا رہا تو تم عنقریب مجھے دیکھ لو گے- پھر جب ان کے رب نے پہاڑ پر تجلی فرمائی، اسے ریزہ ریزہ کردیا اور موسی علیہ السلام بے ہوش ہوکر گرپڑے، پھر جب افاقہ ہوا تو عرض کئے: تیری ذات پاک ہے میں توبہ کرتا ہوں اور میں سب سے پہلا مسلمان ہوں- (سورۃ الاعراف- 143) واللہ اعلم بالصواب سید ضیاء الدین عفی عنہ شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ وبانی ابوالحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر www.ziaislamic.com حیدرآباد ، دکن ،انڈیا

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com