***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > روزہ کا بیان > نفل روزہ کے مسائل

Share |
سرخی : f 653    ستائیسویں رجب کے روزہ اور رات میں عبادت کا ثبوت
مقام : سعید آباد ، انڈیا,
نام : فرید الدین
سوال:    

ہم لوگ شب معراج جاگتے ہیں‘ نفل نمازیں اور قضاء عمری پڑھتے ہیں ، قرآن کی تلاوت میں مصروف رہتے ہیں ،سننے میں آیا ہے کہ اس رات عبادت کرنے کی کوئی حدیث نہیں، سوال کرنا یہ ہے کہ کیا اس رات عبادت کرنے کا ذکرحدیث میں آیا ہے ؟ ایک اور سوال یہ ہے کہ کیارجب کی ستائیس تاریخ کو روزہ رکھنا حدیث سے ثابت ہے؟ مجھے اس جواب کے حوالہ کی ضرورت ہے۔ شکریہ


............................................................................
جواب:    

امام احمد بن حسین ابوبکر بیہقی رحمۃ اللہ تعالی علیہ (متوفی 458) نے " فضائل الاوقات " میں امام علی المتقی الہندی رحمۃ اللہ تعالی علیہ (متوفی 975) نے "کنز العمال "میں اور حضرت شاہ عبد الحق محدث دہلوی رحمۃ اللہ تعالی علیہ نے "ماثبت بالسنۃ" میں درج ذیل حدیث شریف ذکر کی ہے : عن سلمان الفارسی ، قال : قال رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم : فی رجب یوم ولیلۃ من صام ذلک الیوم وقام تلک اللیلۃ کان کمن صام من الدہر مائۃ سنۃ وقام مائۃ سنۃ وہو لثلاث بقین من رجب - ترجمہ:سیدنا سلمان فارسی رضی اللہ تعالی عنہ سے روایت ہے،آپ نے فرمایا کہ حضرت رسول اللہ صلی اللہ علیہ والہ وسلم نے ارشاد فرمایا: رجب میں ایک ایسادن اور ایک ایسی رات ہیکہ جس شخص نے اس دن روزہ رکھا اور اس رات قیام کیا گویا اس نے( سو 100) سال روزہ رکھنے اور( سو100)سال شب بیداری کرنے کاثواب حاصل کیا اور وہ رجب کی ستائیسویں رات اورستائیسواں دن ہے- (فضائل الاوقات للبیہقی،باب فی فضل شہر رجب،حدیث نمبر:11-۔ کنز العمال ، فضائل الازمنۃ، حدیث نمبر35169۔ مسند الفردوس للدیلمی‘ حدیث نمبر 4381۔ ماثبت بالسنۃ ،ص70 ) واللہ اعلم بالصواب سید ضیاء الدین عفی عنہ شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ وبانی ابوالحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر www.ziaislamic.com حیدرآباد ، دکن ،انڈیا

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com