***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > نماز کا بیان > نماز کی سنتیں اور مستحبات

Share |
سرخی : f 679    نماز کیلئے صف کس جانب سے شروع کی جائے ؟
مقام : بالانگر ،انڈیا,
نام : محمدعبدالرشید
سوال:     کبھی صف کے دونوں جانب مقتدی حضرات برابر ہوتے ہیں اور کبھی کسی جانب کم اور کسی جانب صف طویل ہوتی ہے ، ان صورتوں میں نماز میں شامل ہونے والے حضرات صف میں کس جانب کھڑے ہوں؟
............................................................................
جواب:     مقتدی کیلئے افضل مقام وہ ہے جہاں وہ امام سے قریب تر ہو ، اگر صف کے دونوں جانب برابر ہوں تو سیدھی جانب کھڑا ہونا افضل ہے۔
فتاوی عالمگیری کتاب الصلوۃ میں ہے: افضل مکان الماموم حیث یکون اقرب الی الامام فان تساوت المواضع ففی یمین الامام وھو ان حسن ھکذا فی المحیط ۔
اگر داہنی جانب مقتدی زیادہ ہوں اور بائیں جانب کم ہوں تو آنے والے کیلئے صف کے بائیں جانب کھڑا ہونا افضل ہے کیونکہ ایسی صورت میں یہ شخص امام سے قریب تر رہے گا۔ البحر الرائق میں ہے :
اذی استوی جانبا الامام فانہ یقوم الجائی عن یمینہ وان ترجیح فانہ یقوم عن یسارہ۔
ترجمہ :اگر امام کے دونوں جانب صف برابر ہوتو آنے والا داہنی جانب کھڑا ہو‘ اگر داہنی جانب مقتدی زیادہ ہوں تو بائیں جانب ٹہرے ۔
واللہ اعلم بالصواب –
سیدضیاءالدین عفی عنہ ،
شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ ،
بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com
حیدرآباد دکن۔

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com