***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > نماز کا بیان > نماز کی سنتیں اور مستحبات

Share |
سرخی : f 754    تکبیر تحریمہ کے وقت ہاتھ اٹھانا مسنون ہے
مقام : حکیم پیٹ,
نام : محمد عبد الباری
سوال:    

میرے ایک ہاتھ میں بہت زیادہ درد ہے اور دوسرے میں کچھ کم ہے ‘ہاتھوں میں تکلیف کی وجہ سے میں نماز شروع کرتے وقت کانوں تک ہاتھ نہیں اٹھاپاتاہوں‘ مجھے کیا کرنا چاہئے؟ ہاتھ جہاں تک اٹھ سکتے ہیں وہاں تک اٹھا کر چھوڑ دوں یا کانوں تک ہی اٹھاناضروری ہے؟


............................................................................
جواب:    

: تکبیر تحریمہ کے موقع پر کانوں تک ہاتھ اٹھانا‘ مسنون ہے‘ اگر ہاتھوں میں تکلیف کے باعث آپ کانوں تک ہاتھ نہ اٹھاسکتے ہوں تو جس قدر اٹھا سکتے ہوں اٹھائیں‘ اور اگر ایک ہاتھ اٹھانے کی طاقت ہے اور دوسرا ہاتھ نہیں اٹھاجاتا تو ایسی صورت میں ایک ہاتھ اٹھائیں۔ فتاوی عالمگیری‘ کتاب الصلوۃ‘ الفصل الثالث فی سنن الصلوۃ وادابہا وکیفیتہا میں مذکور ہے: وإن لم یمکنہ إلی الموضع المسنون رفعہما قدر ما یمکن وإن أمکنہ رفع إحداہما دون الأخری رفعہا۔ واللہ اعلم بالصواب ۔ سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ ، بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن۔

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com