***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > معاملات > دیت کا بیان

Share |
سرخی : f 840    مرد وعورت کی دیت کیا ہے؟
مقام : بنگلادیش,
نام : محمد قمر الحسن
سوال:     السلام علیکم ورحمة اللہ ، فقہ حنفی کی روشنی میں عورت اور مرد کیا دیت کیا ہے ؟
............................................................................
جواب:     وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاتہ !
قتل کی دیت تین قسم کے اموال سے ادا کی جاسکتی ہے ﴿1﴾سو﴿100﴾اونٹ ﴿2﴾ایک ہزار دینار ﴿3﴾دس ہزار درہم ۔
عورت کے قتل کی صورت میں اس کی دیت مرد کی دیت کی آدھی ہے ۔
فتاوی عالمگیری ،کتاب الجنایات ،الباب الثامن فی الدیات میں ہے ؛  وکل دیة وجبت بنفس القتل یقضی من ثلاثة اشیاء فی قول ابی حنیفة رحمہ اللہ تعالی من الابل والذھب والفضة کذا فی شرح الطحاوی قال ابوحنیفة رحمہ اللہ تعالی من الابل مائة ومن العین الف دینار ومن الورق عشرة الاف ۔
واللہ اعلم بالصواب –
سیدضیاءالدین عفی عنہ
شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ
بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com
حیدرآباد دکن۔

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com