***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > طہارت کا بیان > وضو کے مسائل

Share |
سرخی : f 852    وضوکے بعدآئینہ دیکھنا  
مقام : کریم نگر ،انڈیا,
نام : عبد الحکیم
سوال:    

السلام علیکم !میرے دوسوال ہیں،براہ کرم ازروئے شریعت رہنمائی فرمائیں ۔ (1)وضو کرنے کے بعدآئینہ میں دیکھنے سے کیا وضو مکروہ ہوجائے گا؟ (2)کسی کی زبان کالی ہوتی ہے اورلوگ کہتے ہیں کہ کالی زبان والوں کا کہاہوا انکی دعاء ہویابددعاء فوراً قبول ہوجاتی ہے اورکبھی کبھی ایساہوبھی جاتاہے توکیا ایساکہنا صحیح ہے ؟


............................................................................
جواب:    

(1)وضوء کرنے کے بعدآئینہ میں چہرہ دیکھنے کوقرآن کریم واحادیث شریفہ اورکتب فقہیہ میں کہیں بھی نواقض وضو میں شمارنہیں کیاگیا اورنہ مکروہات میں بتلایاگیا۔ لہذااس سے وضو مکروہ نہیں ہوتا۔ (2)کسی کی زبان کالی ہونے کاطعنہ دیناجائزنہیں اور نہ بدشگونی اسلام میں جائز ہے‘ صحیح بخاری شریف ج1‘ کتاب الطب‘ باب الجذام میں حدیث پاک ہے: لَاعَدْوَی وَلَا طِیَرَۃَ وَلَا ہَامَۃَ وَلَا صَفَرَ۔ ۔ ۔ ۔ ترجمہ : کوئی بیماری متعدّی نہیں ہوتی‘بدشگونی جائزنہیں‘ الّو میں اور صفر کے مہینہ میں کوئی نحوست نہیں۔ (صحیح البخاری ،کتاب الطب، باب الجذام ، حدیث نمبر:5380) اللہ تعالی ہی ہرشیء کا خالق ہے ،انسان کواس بات کا حکم دیاگیاہے کہ وہ اپنی زبان کی حفاظت کرے ،زبان سے اللہ اوراسکے رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی مرضی کے خلاف کوئی بات نہ کہے ،فحش گوئی ‘لغواورلایعنی گفتگوسے احتیاط کرے ‘کسی کے حق میں بددعا کرنے سے بھی گریزکرے۔ دعا یا بددعاکے قبول ہونے یارد ّہونے میں کالی زبان کی کوئی تاثیرنہیں۔ واللہ اعلم بالصواب سیدضیاء الدین نقشبندی عفی عنہ شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی ابوالحسنات اسلامک ریسرچ سنٹرwww.ziaislamic.com حیدرآباد،دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com