***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > عبادات > طہارت کا بیان > وضو کے مسائل

Share |
سرخی : f 864    خون آنکھ کے اندرونی حصہ میں بہہ جائے تو وضو کاحکم
مقام : بنگال,
نام : جمیل الدین احمد
سوال:    

میں عادل آباد کے مضافات میں ایک مسجد میں خدمت انجام دیتاہوں، صراط مستقیم میں شرعی سوال وجواب کے کالم سے بہت زیادہ معلومات حاصل کرتاہوں، یہاں مسجد کے مصلیوں کو مسائل بتلانے میں آپ کے جوابات میرے لئے نہایت ہی مفید ہے ، وضو کے بارے میں ایک مسئلہ دریافت کرنا چاہتا ہوں، آنکھ کے اندر زخم ہو اور خون آنکھ میں بہہ جائے لیکن آنکھ کے باہر نہ آئے تو وضو ٹوٹے گا یا نہیں ؟ اس کا کیا حکم ہے ؟ میرے ایک مصلی نے یہ سوال کیا ہے، جواب عنایت فرمادیں تو آپ کا شکر گزار رہوں گا۔


............................................................................
جواب:    

خون جسم سے نکل کر اپنے مقام سے آگے بڑھ جائے تو وضو ٹوٹتا ہے ، اس کے لئے شرط یہ ہے کہ خون جسم کے ایسے حصہ پر آئے جس کا دھونا وضو یاغسل میں ضروری ہے ، ورنہ وضو نہیں ٹوٹتا۔ اب رہا یہ سوال کہ آنکھ سے خون نکلے، اور بہہ کر اپنے مقام سے تجاوز کرجائے تاہم اندورنی حصہ میں ہی رہے، تو چونکہ مسائل وضو وغسل میں آنکھ اندرون جسم شمار کی جاتی ہے اور وضو وغسل میں اندرونی جسم کو دھونا ضروری نہیں ، اندرون چشم خون بہنے کی صورت ایسی ہی ہے جیسے مار لگنے کی وجہ سے جلد کے اندر خون جما ہوا رہتا ہے ، جلد کے اوپر نہیں آتا۔ لہذا اندورنی آنکھ کے ایک حصہ سے خون نکل کر دوسرے حصہ میں پہنچ جائے تب بھی وضو نہیں ٹوٹتا، ہاں اگر خون آنکھ کے باہر آجاتا ہے تو ایسی صورت میں وضو ٹوٹ جائے گا۔ جیساکہ درمختار کتاب الصلوۃ میں ہے : ( وینقضہ ) خروج منہ کل خارج ( نجس ) بالفتح ویکسر ( منہ ) أی من المتوضء الحی معتادا أو لا ، من السبیلین أو لا ( إلی ما یطہر ) بالبناء للمفعول : أی یلحقہ حکم التطہیر۔ اور رد المحتار کتاب الصلوۃ میں ہے : ( قولہ : أی یلحقہ حکم التطہیر ) فائدۃ ذکر الحکم دفع ورود داخل العین وباطن الجرح ، إذ حقیقۃ التطہیر فیہما ممکنۃ ، وإنما الساقط حکمہ نہر وسراج ویظہر منہ أن الکلام فی جرح یضرہ الغسل بالماء ، فلو لم یضر نقض ما سال فیہ لأن حکم التطہیر وہو وجوب غسلہ غیر ساقط ؛ والمراد بالتطہیر ما یعم الغسل والمسح فی الغسل أو فی الوضوء کما ذکرہ ابن الکمال۔ واللہ اعلم بالصواب ۔ سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ ، بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔ www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن۔ 2011-02-25

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com