***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > معاشرت > نکاح کا بیان > تین طلاق کے مسائل

Share |
سرخی : f 1368    بیک وقت تین طلاق کا شرعی حکم
مقام : دھاروا ڑ ، کرناٹک ، انڈیا,
نام : حفیظ احمد بہشتی
سوال:    

کیافرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شر ع متین مسئلہ ذیل میں کہ زید کا نکاح عائشہ سے ہوا زید نکاح کے بعد شراب پی کر عائشہ پر بے انتہاء ظلم کرتاتھا ، جسکی وجہ سے عورت نے تنگ آکر اس سے طلاق کا مطالبہ کی، بہت اصرار کے بعد زید نے کورٹ میں آکرطلاق نامہ لکھا اور چار گواہوں کیسامنے اس نے تین مرتبہ طلاق کا لفظ کہا اور گواہ آج تک اسکی شہادت کیلئے تیار ہیں۔ اسکے بعد طلاق کے ایک سال دو مہینے کے لڑکی کے والد دوسرے لڑکے سے شادی کردیا ، اب لڑکے کے ذمہ داریہ کہہ رہے ہیں کہ یہ طلاق نہیں ہوئی ، اور اس طلاق کا انکار کررہے ہیں ، لہٰذا حکم شرعی اسکے لئے کیا ہے ، وضاحت فرمائیں ۔عین نوازش وکرم ہوگا ۔


............................................................................
جواب:    

سہ بارہ طلاق کا طریقہ یقینا قرآن وحدیث کے خلاف اور گناہ ومعصیت ہے ،غور وفکر کے بغیر غصہ کی حالت میں طلاق دینے کی وجہ سے زوجین مزید مشکلات میں مبتلیٰ ہوجاتے ہیں،اس لئے سہ بارہ طلاق کاطریقہ اختیار نہیں کرنا چاہئیے اورمسلم معاشرے میں مرد حضرات کو اس سے واقف کرانا چاہئیے تاکہ سہ بارہ طلاق کا غیرشرعی طریقہ اختیار نہ کیاجائے او رمعصیت کی یہ راہ مسدود ہوجائے ،اس کے باوجود اگر کوئی شخص تین طلاق دے تو تین واقع ہوجائیں گی ۔ عہد نبوی میں ایک صاحب نے تین طلاق دی تو حضورپاک صلی اللہ علیہ وسلم نے اسے نافذقرار دیا،سنن ابوداؤد شریف کتا ب الطلاق ،باب فی اللعان ص 306، میں حدیث پاک ہے :عن سهل بن سعد في هذا الخبر قال فطلقها ثلاث تطليقات عند رسول الله صلی الله عليه وسلم فانفذه رسول الله صلي الله عليه وسلم۔ ترجمہ : حضرت سہل بن سعد رضی اللہ عنہ سے( حضر ت عویمر عجلانی رضی اللہ عنہ کے) واقعہ کے بارے میں روایت ہے انہوں نے فرمایا (عویمرعجلانی رضی اللہ عنہ)نے حضرت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے حضور اپنی بیو ی کو تین طلاق دی توحضرت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ان کی تین طلاق کو نافذ قرار دیا ۔ اس حدیث شریف سے معلوم ہو تا ہے کہ تین طلاق کو کالعدم نہیں قرار دیا جاسکتا ،جمہور صحابہ و تابعین اور ائمہ اربعہ اہل سنت کا مذہب یہی ہے کہ تین طلاق دینے سے تین طلاق واقع ہوجاتی ہیں ۔ واللہ اعلم بالصواب سید ضیاء الدین عفی عنہ شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدرابوالحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر www.ziaislamic.com حیدرآباد ، دکن ،انڈیا

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com