***** دیگر فتاوی مطالعہ کرنے کے لئے داہنی جانب والی فہرست پر کلک کریں *****



مضامین کی فہرست

فتاویٰ > معاشرت > نکاح کا بیان > طلاق کے مسائل

Share |
سرخی : f 509    شوہرسے تین سال علحدہ رہنے پرکیا طلاق واقع ہوجائیگي؟
مقام : پاکستان,
نام : سمران
سوال:    

السلام علیکم مفتی صاحب !میں نے سنا ہیکہ شوہر اگر بیوی سے تین سال تک علاحدہ رہے تو اس پر طلاق ہوجائیگی ، کیا یہ صحیح ہے ؟میں شادی شدہ ہوں اور میرے شوہر باہر رہتے ہیں ،اور لوگ مجھکو اس طرح سے مشورہ دے رہے ہیں کہ تم دوسرا نکاح کرلو۔


............................................................................
جواب:    

وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ! شریعت مطہرہ میں میاں بیوی کے علحدہ رہنے سے نکاح ختم نہیں ہوتا ،آپ کو جس کسی نے یہ بات بتائی کہ تین سال علحدہ رہنے سے نکاح ختم ہوتا ہے یہ بالکل غلط بات ہے، آپ کو چاہئیے کہ اپنے شوہر سے رابطہ قائم کریں اور ان سے خواہش کریں کہ ایک دوسرے کے ساتھ مل جل کر حسن معاشرت کے ساتھ زندگی بسر کرینگے ،اگر انہیں کوئی مشکل یا دشواری ہے تو ان سے طلاق یا خلع کا مطالبہ کریں ،اگر آپ کے شوہر طلاق دے دیں یا خلع پر راضي ہوجائیں تو ایسی صورت میں آپ کا نکاح ختم ہوگا اس کے بعد عدت گزار کر دوسرے سے عقد کرسکتے ہيں – واللہ اعلم بالصواب – سیدضیاءالدین عفی عنہ ، شیخ الفقہ جامعہ نظامیہ بانی وصدر ابو الحسنات اسلامک ریسرچ سنٹر ۔www.ziaislamic.com حیدرآباد دکن

All Right Reserved 2009 - ziaislamic.com