Hindi English
 
 
 

Share |
: مضمون
آشوب چشم کا فوراً دفع ہونا

خصائص کبریٰ میں ہے کہ غزوۂ خیبر میں آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم نے ایک روز فرمایا کہ کل میں نشان ایسے شخص کے ہاتھ میں دونگا جس کو خدا و رسول دوست رکھتے ہیں ۔ جب صبح ہوئی تو آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم نے استفسار فرمایا کہ علی (رضی اللہ عنہ) کہاں ہیں؟ لوگو ں نے کہا :ان کی آنکھوں میں درد ہے ۔فرمایا :ان کو بلا لو ۔ جب وہ آئے تو آپ نے ان کی دونوں آنکھوں میں تھوکا جس سے وہ فوراً اچھے ہوگئے ۔ او ر نشان ان کو عطا فرمایا ۔ وہ نشان لے کر روانہ ہوگئے ۔ اور قلعہ کے پاس اس کو گاڑ دیا ۔

قلعہ پر سے ایک یہودی نے پوچھا تمہارا نام کیا ہے ۔آپ نے کہا :علی، اس نے کہا : اب تم غالب ہوگئے ، چنانچہ ایسا ہی ہوا کہ آپ نے قلعہ کو فتح کر لیا ۔انتہیٰ ۔

اس کی وجہ یہی ہوگی کہ ان کی کتا بوں میں لکھا ہوگا جن کے ہاتھ پر وہ قلعہ فتح ہوگا ان کا نام علی ہوگا ۔

حضرت علی کرم اللہ وجہہ فرما تے ہیں کہ جب سے آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم نے آبِ دہن مبارک میرے آنکھوں میں ڈالا کبھی نہ آشوب چشم ہو انہ سر میں درد اور نہ کبھی سردی ہوئی نہ گرمی ۔

سردی وگرمی کازائل ہو نا

اسی وجہ سے آپ سخت سردی کے وقت بھی ایک ہی چادر اوڑھتے تھے ۔ یہ لعاب مبارک کا اثر تھا کہ عمر بھر کے لئے دوا ہوگئی او رصرف دواہی نہیں بلکہ طبعی امور میں بھی انقلاب ہوگیا کہ کرۂ ہوا کی تا ثیر سے آپ کا جسمِ مبارک مستثنیٰ ہوگیا ۔ سردی اور گرمی ہوا کی طاقت نہ تھی کہ اپنا زور بتا ئے ۔

دیکھئے سرد ہوا کے اثر کو روکنے کے لئے کیسی کیسی تدا بیر کی جا تی ہیں،جسم اور ہوا کے درمیان گرم لباس حائل کیا جا تا ہے تاکہ وہ جسم تک نہ پہنچے ۔ کبھی آگ جلا کر ہوا کی سردی دفع کی جا تی ہے ۔تا کہ اس کا اثر با قی نہ رہے اوریہاں بر خلاف اس کے خالص سرد ہوا بغیر کسی حائل کے برابر جسم کو لگتی تھی مگر اس کا اثرنہیں ہوتا تھا ،جس طرح ابراہیم علیہ السلام کے جسم مبارک کو آگ لگتی تھی مگر اس کا کچھ اثر نہیں ہوتا تھا ۔

اگر تامل سے دیکھا جا ئے توابراہیم علیہ السلام کے واقعہ میں اس میں کوئی فرق نہیں بلکہ اس سےبھی زیادہ ہے، اس لئے کہ وہاں چند ساعتوں تک وہ بات رہی او ریہاں عمر بھر ۔

اسی قسم کے آثار مشاہدہ ہونے کی وجہ صحابہ روز آنہ حضرت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا تھوک اور رینٹ لے کر چہروں پر ملتے تھے تا کہ دارین میں سرخروئی حاصل رہے ۔

(مقاصد الاسلام ج9،ص239تا241)

submit

  SI: 57   
حضور صلی اللہ علیہ وسلم ہمارے درود وسلام سنتے ہیں  

  SI: 65   
حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کو دیکھنے والا شقاوت سے نکل جاتاہے  

  SI: 41   
اذان کی برکت  

  SI: 47   
آشوب چشم کا فوراً دفع ہونا  

  SI: 68   
قرآن و حدیث سے مسائل کا استنباط کرنا ہرکسی کا کام نہیں  

  SI: 56   
تمام انبیاء و ملائک پر خصوصیت و عظمت آشکار  

  SI: 67   
سرکاردوعالم کی توجہ وعنایت آن واحد میں سب کی طرف  

  SI: 13   
میلاد النبی صلی اللہ علیہ واٰلہ وسلم کی شرعی حیثیت ۔ قسط اول  

  SI: 60   
درود پڑھنے والے پر اللہ کی رحمتیں  

  SI: 64   
عینِ عبادت نماز میں حکمِ صلوۃ وسلام  

Copyright 2008 - Ziaislamic.com All Rights reserved